سیاستہندوستان

اب دیکھتا ہوں لوٹ مچانے والے کتنا بچتے ہیں: مودی

پالی:وزیر اعظم نریندر مودی نے کانگریس پر بدعنوانی کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ مرکزی حکومت کو عدالت سے کانگریس رہنما سونیا گاندھی اور صدر راہل گاندھی کے خلاف پرانے معاملے کی انکوائری کرنے کی منظوری مل گئی ہے اور اب دیکھتا ہوں کہ لوٹ مچانے والے یہ لوگ کتنا بچ کر نکلتے ہیں۔مسٹر مودی آج پالی ضلع کے سمیر پور میں بی جے پی امیدوار کی حمایت میں منعقد جلسہ عام سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ جب سے وہ اقتدار میں آئے ہیں بدعنوانی کرنے والوں پر نگاہ ڈالی اور ان کے تمام پرانے معاملات کھولے گئے لیکن یہ لوگ عدالت میں چلے گئے۔ اب عدالت سے ضمانت پر رہا ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ پرانے معاملے کھولنے کا حکومت کا حق ہے اور اب دیکھتا ہوں کہ کتنا بچ کر نکلتے ہیں۔انہوں نے اگستا ویسٹ لینڈ وی وی آئی پی ہیلی کاپٹر گھپلہ کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے اس معاملے کی انکوائری شروع کی اور اس کے ایک رازدار کو متحدہ عرب امارات سے پکڑ کر لایا گیا ہے اور اب یہ رازدار راز کھولے گا تو پتہ نہیں بات کتنی دور تک جائے گی۔انہوں نے کہا کہ اس گھپلے سے متعلق کڑیوں کی ہم کافی دنوں سے تلاش کررہے تھے۔ اب اس میں سے ایک رازدار ہاتھ لگ گیا ۔ یہ دلالی کا کام کرتا تھا۔ ہندوستان کے نام داروں کے یار دوستوں کو خوش رکھتا اور ان کا خیال رکھتا تھا۔ یہ انگلینڈ کا شہری ہے اور دوبئی میں رہتا تھا۔انہوں نے مسٹر راہل پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ نامدار کو اپنے لیڈر کا نام بھی نہیں معلوم ۔ انہوں نے اسے ایمانداری اور محنت کرنے والی کی جیت قرار دیا ۔ انہوں نے کہا کہ کروڑوں کی ہیراپھیری کرنے والے ضمانت پر باہر ہیں۔ انہوں نے کانگریس پر پچھلے ستر برسوں میں ملک کو برباد کردینے کا الزام بھی لگایا ۔ا نہوں نے کہا کہ راجستھان میں عوام نے بی جے پی کی حکومت بنانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان کا مقصد صرف راجستھان جیتنا نہیں بلکہ ہر پولنگ بوتھ جیتنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ انتخابی مہم ختم ہونے کے بعد رہنما اور کارکنوں ایک ایک گھر جائیں گے اور سبھی مل کر زیادہ سے زیادہ پولنگ کرائیں گے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close