بہارسیمانچل

ارریہ شہر میں کچڑے کا انبار ،سڑک اور نالی کابھی براحال

ارریہ : ارریہ شہر کے چاندنی چوک سے سبزی منڈی جانے والی سڑک کے چوراہے (کلکتیا ہوٹل) کے نزدیک دو دنوں سے نکالے سے نکالی ہوئی گندگی یونہی سڑک پر پڑی ہے۔ اس کی طرف کسی کی نظر نہیں جاتی ہے۔ کلکتیا ہوٹل کے آگے نالے کے ایک سائٹ پر بانس دے کر کسی طرح لوگ آمدورفت کرتے ہیں اسی چوراہے سے ایک طرف لو گ مندر جاتے ہیں تو دوسری طرف جامع مسجد ارریہ کی جانب جاتی ہے۔ جس سے عقیدت مندوں کو بدبو اور کچڑے کا سامنا کرنا پڑتاہے۔ تبانا لازمی ہوگا کہ جب کالی مندر کے بابا مہادنڈ پرنام یاترا کرجامع مسجد کے امام اوردیگر مسلم بھائیوں سے ملاقات کرتے ہیں تو اس آپسی اتحاد کی خوشبو پورے ہندوستان میں جاتی ہے۔ نگر پریشد حلقہ ارریہ میں پانی نکالنا تو ایک بڑا مسئلہ ہے۔ اس کے علاوہ وارڈ نمبر 25 کے مولوی ٹولہ جانےوالی سڑک کے شروع میں ہی نالے کے بیچ گڈھے کا ہونا موت کو دعوت دیتے جیساہے۔ جس سے لوگوں کو آمدورفت کرنے میں کافی پریشانی ہوتی ہے۔ اس کے علاوہ جام کی کہانی بہت پرانی ہے۔ جب کہ بڑی گاڑیوں کا سبزی منڈی آناجانا سخت منع ہے۔ اس کے باوجود بھی بہت شان سے آمدورفت کرتے ہیں۔ اس کے متعلق وارڈ کونسلر رہنما پپو عزیز سے رابطہ قائم کرنے کے بعد بھی بات چیت نہیں ہوپائی۔ اس پر سابق وارڈ کونسلر کمال حق نے کہا کہ نالہ سے کچڑا نکال کر روڈ پر چھوڑ دینے سے یقینا عقیدت مندوں  اورعام انسانوں کو آمدورفت کرنے میں کافی پریشانیاں ہوتی ہیں۔ جب کہ کلکتیاہوٹل کے نزدیک کھنڈر اور چچری پل کی طرح بنائی گئی نالہ موت کو دعوت دے رہی ہے۔ مسٹر کمال نے کہا کہ وارڈ کی گندگی کوڑے کچڑے کو صاف کرانے کی ذمہ داری وارڈ کونسلر کی ہے۔ لیکن کونسلر رہنما ادھر کبھی نظر نہیں آتے ہیں۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close