ٹیکنالوجیہندوستان

اسرو کا نیا کارنامہ: 9 ممالک کے 31 سیٹلائٹس کی کامیاب لانچنگ

شری ہری کوٹا: ہندوستان کے سیٹلائٹ لانچنگ وہیکل (پی ایس ایل وی) سی 43 نے صبح 380 کلو گرام وزنی ہائپر اسپیکٹرل امیجنگ سیٹلائٹ اور 8 دوسرے ممالک کے 30 سیٹلائٹس کے ساتھ کامیابی سے شری ہری کوٹا سے لانچ کیا۔ لانچنگ کا آغاز 9:58 بجے ہوا۔اپنے مقررہ شدہ پروگرام کے تحت ملک میں تیار اس لانچنگ وہیکل راکٹ نے تیز آواز کے ساتھ پرواز بھری اور کچھ ہی لمحات میں آسمان کا سینہ چیرتے ہوئے اپنی منزل کی طرف رواں دواں ہوگیا۔ آندھرا پردیش کے شری ہری كوٹا کے ستیش دھون خلائی مرکز سے اس کی لانچنگ عمل میں آئی۔ہندوستانی خلائی تحقیقی تنظیم (اسرو) کے مطابق، پی ایس ایل وی سی 43 کی الٹی گنتی بدھ کی صبح 5.58 بجے شروع ہوئی تھی۔ امیجنگ سیٹلائٹ زمین کی نگرانی کے لئے ہے اور اس کو اسرو نے تیار کیا ہے۔
یہ پی ایس ایل وی سی 43 مشن کا پہلا سیٹلائٹ ہے۔اس سیٹلائٹ نے پروازکے 17 منٹ بعد ہی ہائپر امیجنگ سیٹلائٹ کو اس کےمقررہ مدار میں نصب کردیا۔ یہ مدار زمین کی سطح سے 636 کلومیٹر کی اونچائی پر ہے اور اسے ’پولر سن سنکرونس آربٹ‘ کہا جاتا ہے جس کا خط استوا سے جھکاؤ 97.957 ڈگری ہے۔اس کا مدار میں تنصیب ہوتے ہی کنٹرول پینل میں بیٹھے ہندوستانی سائنسدانوں کی خوشی کا کوئی ٹھکانا نہیں رہا اور اسرو صدر ڈا کٹرکے اشون نے وہاں موجود تمام سائنسدانوں کو مبارکباد دی۔اس مہم میں وہیکل لانچنگ کا چوتھے مرحلے کا انجن بند ہو جائے گا اور اس کے بعد یہ اپنے آپ شروع ہوکر 642 کلومیٹر کی اونچائی سے نیچے 504 کلومیٹر پر آئے گا اور ان 30 سیٹلائٹس کو ذیلی مدارمیں قائم کر دے گا۔
ان 30 سیٹلاٹس میں 23 سیٹلائٹ امریکہ کے ہیں اور باقی کولمبیا، فن لینڈ، ملیشیا، ہالینڈ آسٹریلیا، کینیڈا، اورا سپین کے ہیں۔ اسرو کی تجارتی شاخ انٹریکس کارپوریشن لمیٹڈ کے توسط سے لانچنگ کے لئے ان سے تجارتی معاہدہ کیا ہے۔ ہائپر اسپیکٹرل امیجنگ سیٹلائٹ اپنے مدار میں پانچ سال تک رہے گا۔اسرو کے مطابق ہائپر اسپیکٹرل میں اعلی درجے کے کیمرے ( امیجر) لگے ہیں اور یہ عمومی روشنی، انفراریڈ اور شارٹ ویوو اورانفراریڈ بینڈز میں تصاویر لینے کی صلاحیت ہے۔ اس میں لگے ملٹی اسپیکٹرل سینسر کی مدد سے عالمی کوریج ہو سکے گی اور اس سے حاصل اعداد و شمار کا استعمال مختلف مقاصد کے لئے کیا جا سکے گا۔اس سے زراعت، جنگلات، جغرافیائی ماحول، ساحلی علاقوں اور بین الملکی آبی علاقوں میں اہم معلومات حاصل کی جا سکے گی۔ پی ایس ایل وی کی اس سال یہ چھٹی پرواز ہے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close