کھیل

امیش اور ہندستان کا ‘پرفیکٹ -10’

حیدرآباد:فاسٹ بولر امیش یادو (133 رن پر 10 وکٹ) کے کیریئر کی شاندار گیند بازی کی بدولت ہندستانی کرکٹ ٹیم نے ویسٹ انڈیز کے خلاف دوسرے اور آخری کرکٹ ٹیسٹ کے تیسرے ہی دن اتوار کو 10 وکٹ سے یکطرفہ جیت اپنے نام کے ساتھ سیریز میں 2-0 سے کلین سویپ کر لی۔
ہندستان نے ویسٹ انڈیز کی دوسری اننگز کو 46.1 اوور میں 127 رنز پر ڈھیر کر دیا تھا جس سے اسے 72 رنز کا معمولی ہدف حاصل ہوا تھا اور اس نے تیسرے دن کا کھیل ختم ہونے سے چند اوور پہلے بغیر کوئی وکٹ کھوئے 16.1 اوور میں 75 رن بنانے کے ساتھ جیت اپنے نام کر لی ۔ نوجوان بلے باز پرتھوی شا نے چوکا لگا کر ہندستان کے لیے جیت کا رن بنایا انہوں نے ناٹ آؤٹ 33 رن اور لوکیش راہل نے ناٹ آؤٹ 33 رنز کی اننگز کھیلی۔
ہندستان نے اس سے پہلے راجکوٹ ٹیسٹ کو بھی تین دن میں ختم کر دیا تھا جس میں اسے اننگز اور 272 رنز سے کیریئر کی سب سے بڑی کامیابی ملی تھی۔ ہندستان نے اسی کے ساتھ دوسرا میچ 10 وکٹوں سے اپنے نام کر لیا اور سریز کو 2-0 سے جیتا جو اس ویسٹ انڈیز کے خلاف مسلسل ساتویں سریز جیت ہے۔
پرتھوی نے 45 گیندوں کی اننگز میں چار چوکے لگائے جبکہ راہل نے 53 گیندوں میں ایک چوکا اور ایک چھکا لگایا۔ پہلے ٹیسٹ میں سنچری کے ساتھ ڈیبو کرنے والے پرتھوی نے اس میچ کی پہلی اننگز میں 70 رن بنائے تھے۔ ہندستان کو پہلی اننگز میں برتری میں بھی پرتھوی کا اہم کردار رہا۔ صبح ہندستان کی پہلی اننگز لنچ تک 367 رن پر سمٹ گئی تھی جس سے اسے 56 رنز کی برتری ملی۔
ہندستان کی معمولی برتری سے ایک وقت ویسٹ انڈیز میچ میں کنٹرول میں لگ رہی تھی لیکن ہندوستانی بولروں خاص طور 30 سالہ تجربہ کار فاسٹ بولر امیش نے اپنی کارکردگی سے مہمان ٹیم کو اس کی دوسری اننگز میں ٹکنے ہی نہیں دیا اور اوپنر كارلوس بریتھویٹ کو صفر پر رشبھ پنت کے ہاتھوں کیچ کراکر دوسری ہی گیند پر ہندستان کو پہلا وکٹ دلا دیا۔ اس کے بعد کیرون پاول روی چندرن اشون کی گیند پر اجنکیا رہانے کو کیچ دے بیٹھے اور ونڈیز کے دونوں اوپنر کھاتہ کھولے بغیر لوٹ گئے۔
ویسٹ انڈیز کے لیے دوسری اننگز میں مڈل آرڈر کے سنیل امبريس نے 95 گیندوں میں چار چوکے لگا کر سب سے زیادہ 38 رن بنائے اور ٹاپ اسکورر رہے جبکہ شائي ہوپ نے 28 رن جوڑے جنہیں جڈیجہ نے آؤٹ کیا۔ ویسٹ انڈیز نے صرف 68 رن تک اپنے پانچ وکٹ کھو دیئے۔ روسٹن چیز (6) اور شین ڈارچ (0) پر دونوں بلے بازوں کو بولڈ کیا۔ کپتان جیسن ہولڈر 19 رن ہی بنا پائے اور رویندر جڈیجہ کے ہاتھوں آؤٹ ہوئے۔ جیمز واركن (7) کو روی چندرن اشون نے آؤٹ کیا اور ویسٹ انڈیز کا نواں وکٹ گر گیا۔
امیش اپنے 10 وکٹ کی بہترین کارکردگی سے ایک وکٹ ہی دور تھے کہ کپتان وراٹ کوہلی نے انہیں گیند دینے کا فیصلہ کیا اور امیش نے انہیں مایوس نہیں کیا اور شینن گیبریل (1) کو بولڈ کرنے کے ساتھ نہ صرف ویسٹ انڈیز کی اننگز سمیٹ دی بلکہ وہ ہندستانی زمین پر میچ میں 10 وکٹ لینے والے تیسرے فاسٹ بولر بھی بن گئے۔
اس سے پہلے ہندستان کی پہلی اننگز تیسرے دن لنچ تک 106.4 اوور میں 367 رن پر سمٹ گئی۔ ہندستان نے اپنے چھ وکٹ 53 رن کے اندر ہی گنوا دیے۔ گھریلو ٹیم کو مہمان ٹیم سے سخت چیلنج ملا جس کا نتیجہ رہا کہ ہندستان کا کوئی بھی بلے باز پہلی اننگز میں سنچری تک نہیں پہنچ سکا۔ وکٹ کیپر رشبھ کے لیے یہ عجیب اتفاق رہا کہ وہ راجکوٹ کی ہی طرح دوسرے میچ میں بھی 92 رنز پر ہی آؤٹ ہوئے۔
رہانے بھی سنچری سے 20 رن دور رہے اور 80 رنز پر آؤٹ ہوئے۔ رہانے اور پنت نے لیکن پانچویں وکٹ کے لئے 152 رن کی سنچری شراکت کرتے ہوئے ہندستان کو جیت تک پہنچایا جبكہ روی چندرن اشون نے اہم 35 رن بنائے جس سے ہندستان کو پہلی اننگز میں 56 رنز کی برتری ملی۔
ویسٹ انڈیز کے لیے حیدرآباد ٹیسٹ سے واپسی کر رہے کپتان جیسن ہولڈر نے یہاں راجیو گاندھی انٹرنیشنل اسٹیڈیم میں بہترین بلے بازی کے بعد بہترین گیند بازی دکھائی اور 23 اوور میں 56 رن پر ہندستان کے سب سے زیادہ پانچ وکٹ نکالے۔ یہ پانچواں موقع ہے جب ہولڈر نے ٹیسٹ اننگز میں پانچ وکٹ نکالے ہیں۔ اس کے علاوہ شینن گیبریل نے 107 رن پر تین وکٹ اور جومیل واركن نے 84 رن پر دو وکٹ نکالے۔
ہندستان نے اننگز کا آغاز کل کے چار وکٹ پر 308 رن سے آگے بڑھاتے ہوئے کیا۔ اس وقت رہانے 75 اور پنت 85 رنز بنا کر کریز پر تھے۔ لیکن ہولڈر اور گیبریل کی جارحانہ گیند بازی سے دونوں ہی کھلاڑی کل کے اسکور میں خاص اضافہ نہیں کر سکے۔ رہانے 5 رن جوڑ کر ہولڈر کی گیند پر شائي ہوپ کو کیچ دے بیٹھے۔ رہانے نے 183 گیندوں میں سات چوکے لگا کر 80 رن بنائے جو ان کی 15 ویں ٹیسٹ نصف سنچری ہے۔
راجکوٹ میں ان کے کیریئر کی پہلی ٹیسٹ سنچری بنانے والے آل راؤنڈر جڈیجہ کو ہولڈر نے کھاتہ بھی نہیں کھولنے دیا اور ہندوستان کا چھٹا وکٹ اڑا دیا۔ اس کے بعد پنت کا صبر بھی جواب دے گیا اور وہ گیبریل کی گیند پر شمرون هتمائر کو کیچ دے بیٹھے۔ پنت نے راجکوٹ میں بھی 92 رن بنائے تھے اور اس بار بھی وہ سنچری سے آٹھ رن دور رہ گئے۔ انہوں نے 134 گیندوں کی اننگز میں 11 چوکے اور دو چھکے لگائے۔
نچلے آرڈر پر ہمیشہ مفید ثابت ہونے والے اشون نے 83 گیندوں کی اننگز میں چار چوکے لگا کر 35 رن جوڑے۔ کلدیپ یادو (6) کو ہولڈر نے سستے بولڈ کر آٹھواں وکٹ نکالا جبکہ گیبریل نے جلد ہی دوبارہ اشون کو بولڈ کر نواں وکٹ گرا دیا۔ لنچ سے ٹھیک پہلے امیش یادو (2) واركن کی گیند پر آؤٹ ہوئے اور ہندستانی اننگز 367 پر سمٹ گئی۔ گزشتہ میچ میں زخمی ہوئے شاردل ٹھاکر چار رن پر ناٹ آؤٹ رہے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close