تعلیم

انٹر میں داخلہ کے لیے فارم بھرنے کی آخری تاریخ 9جولائی

کمپارٹمینٹل امتحان کی فیس جمع کرنے کی تاریخ 10جولائی تک

پٹنہ :بہار اسکول اکزامینیشن بورڈ کے چیر مین آنند کشور نے آج بتایا کہ شام 6بجے تک 6لاکھ 30ہزار سے بھی زیادہ طلبا نے انٹر میں داخلہ کے لیے آن لائن فیسلیٹیشن سسٹم فار اسٹوڈینٹ او ایس ایف سافٹ ویئر کے توسط سے داخلہ کے لیے آن لائن درخواست دیاہے۔ واضح ہو کہ انٹر سطح کی تعلیم دینے والے ان تعلیمی اداروں میں او ایس ایس سافٹ ویئر کے توسط سے داخلہ کے لیے ویب سائٹ www. ofssbihar.inپر کیے جارہے آن لائن فارم جمع کرنے کی آخری تاریخ 9جولائی مقرر ہے اس لیے تعلیمی داروں میں داخلہ کے خواہش مندر طلبا اور ان کے گارجین مقررہ آخری تاریخ مورخہ 9جولائی تک آن لائن درخواست جمع کرنے کو یقینی بنائیں ۔آن لائن درخواست کرتے وقت کسی بھی قسم کا مسئلہ پیدا ہونے یا کسی قسم کے دیگر مسائل کے نپٹارہ اس عمل کے سلسلے میں پوچھ تاچھ کرنے کے لیے ہیلتھ سینٹر نمبر 0612-2230009کسی بھی کام دن میں 10سے 5بجے کے درمیان رابطہ کیا جا سکتا ہے۔ یہ 30لائن کا کال سینٹر ہے جس پر 30کال ایک ساتھ ایٹینڈ کرنے کاانتظام ہے ریاست کے سبھی ضلعوں میں مختلف کالجوں میں کل 75ہیلپ ڈیکس بنائے گئے ہیں جس کی تفصیل ویب سائٹ www. ofssbihar.in پر اپلوڈ ہے ان ہیلپ ڈیکسوں کے توسط سے بھی مسائل کا حل تیزی سے نکالا جاسکتا ہے۔ آن لائن درخواست جمع کرنے اور فیس جمع کرنے کے لیے پوری ریاست میں 2800سہج فیصلیٹی سینٹر کو اختیار دیا گیا ہے۔ جہاں جاکر آن لائن درخواست جمع کرنے اور فیس جمع کیا جاسکتا ہے۔
میٹرک کمپارٹمینٹل امتحان 2018میں شامل ہونے کے لیے آن لائن امتحان فارم بھرنے اور فیس جمع کرنے کے لیے بورڈ کی جانب سے 28جون سے7جولائی تک موقع دیا گیا ہے۔ اس سلسلے میں بورڈ کے چیر مین آنند کشور نے بتایا کہ ویسے طلبا جن کا تعلیمی ادارہ اس مدت کے دوران آن لائن فارم بھر دیا گیا ہے لیکن فیس کسی وجہ سے جمع نہیں کیا جا سکا ہے تو انہیں امتحان فیس جمع کرنے کے لیے بورڈ کے ذریعہ تاریخ میں توسیع کی گئی ہے اس کے تحت کمپاٹیمینٹل امتحان میں شامل ہونے کے لیے آن لائن درخواست دیاگیاہے۔طلبا کو امتحان فیس جمع کرنے کے لیے بورڈکے ذریعہ تعلیمی ادارہ کو 10جولائی تک اضافی موقع دیا جارہا ہے اس لیے سبھی امتحان دہندگان اور تعلیمی ادارہ کے ہیڈ سے گزارش ہے کہ وہ 10جولائی تک ہر حال میں امتحان فیس جمع کرالیں تاکہ اس تعلیمی دارے کا کوئی بھی طالب علم کمپاٹیمٹ امتحان میں شامل ہونے سے محروم نہ ہوجائے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close