ہندوستان

آئین کی حفاظت کیلئےہم ہرممکن کوشش کریں گے:ممتا

کولکاتا:ہندوستان کے آئین اور اس کے روح کی حفاظت کیلئے ہر ممکن کوشش کرنے کا عہد کرتے ہوئے وزیرا علیٰ ممتا بنرجی نے ”یوم آئین“ پر ڈاکٹر امبیڈکر اور آئین ساز اسمبلی کے تمام اراکین کو خراج عقیدت وتحسین پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان تمام حضرات کی کدو کاوش کے نتیجے میں ”آئین ہند“ جیسی جمہوریت کی مقدس کتاب ہمیں ملی ہے۔وزیرا علیٰ نے ٹوئیٹ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ڈاکٹرامبیڈکر اور آئین ساز اسمبلی کے دیگر اراکین کی بدولت ہی ہمیں آئین ملا ہے۔اس لیے یوم آئین پر ہمیں اس کا عہد کرنا چاہیے کہ آئین، آئین کے روح کی حفاظت کیلئے ہر ممکن کوشش کرنی چاہیے۔اسی آئین نے ہمیں اعلیٰ اقدار، سوشلزم، سیکولرازم، جمہوریت، انصاف، لبرٹی، اخوت اور مساوات فراہم کی ہے۔خیال رہے کہ 26 نومبر کو آئین کا دن ہر سال منایا جاتا ہے۔26 نومبر 1949و ہندوستان کا آئین تیار ہوا تھا۔ ڈاکٹر امبیڈکرنے آئین کو دو سال، 11 ماہ اور 18 دن میں تیار کرکے قوم کے نام وقف کیاتھا۔ہمارے آئین کو دنیا کا سب سے بڑا آئین تصور کیا جاتا ہے۔ہندوستان کے آئین کو26 جنوری، 1950 سے نافذ کیا گیا تھا۔پہلی مرتبہ’’یوم آئین ‘‘منانے کا فیصلہ2015 میں حکومت ہند نے کیا تھا۔آئین ساز اسمبلی میں ڈاکٹر امبیڈکر کے علاوہ پنڈت جواہر لال نہرو، سردار ولبھ بھائی پٹیل، مولانا ابوالکلام آزادجیسی شخصیات شامل تھیں۔آئین میں 448 دفعات اور 12 شیڈول ہیں اور یہ 25 حصوں میں تقسیم ہے۔آئین ساز اسمبلی کے 284 ارکان نے 24 جنوری 1950کو دستاویز پر دستخط کیے اور اسے دو دن بعد 26جنوری1950 کو نافذ کیا گیا۔آئین کے مسودہ کوتیار کرنے میں کسی قسم ٹائپنگ یا پرنٹنگ مشین استعمال نہیں کیا گیا۔29اگست 1947 کو آئینی مسودہ تیار کرنے والی آئین ساز کمیٹی تشکیل دی گئی تھی۔اس کی صدارت کیلئے ڈاکٹر امبیڈکر کو مقرر کیا گیا تھا۔آئین کو تیار کرنے میں کم وبیش ایک کروڑ روپے کا صرفہ آیا تھا۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close