مگدھ

اکاؤنٹ ہولڈر اور بینک کے ملازمین کے درمیان جھڑپ

بتیا،بلاک ہیڈ کوارٹر واقع ایس بی آئی مےناٹاڑ میں منگل کو اکاؤنٹ ہولڈر اور بینک کے اہلکاروں کے درمیان جم کر جھڑپ ہوئی۔ کسی نہ کسی طرح معاملہ بیچ بچاؤ شانت کراتے ہوئے حل کیا گیا تھا۔ ہوا یوں کہ پرشوتم پور تھانہ حلقہ کے نک چھےد بہواروا رہائشی شفیع الرحمن پیسہ جمع کرانے کے لئے بینک آئے تھے۔ بینک کے احاطے میں لگا لائن کے آگے جاکر شفیع الرحمن کھڑا ہو گئے۔ اس درمیان بینک کا گارڈ سمیت دیگر اہلکار آگ بگولا ہوگئے اور غیر شائستہ زبان استعمال کرنے لگے۔ ادھر شفیع الرحمن کی مانے تو جب وہ بینک کے اہلکاروں کے رویے کے خلاف مزاحمت کرنے لگے تو اسے زبردستی ایک کمرے میں لے جا کر دھکا مکی کر اس کے پاس رکھیں 40 ہزار روپیہ چھین لئے گیا۔ ادھر بینک اہلکاروں کے برتاؤ دیکھ کر دوسرے اکاؤنٹ ہولڈر بھی حیران رہ گئے۔ ادھر معاملے کو لے کر بینک کے احاطے میں افرا تفری کا ماحول دیکھا گیا۔اکاؤنٹ ہولڈروں کی مانےں تو بینک اہلکاروں کا برتاؤگاہکوں کے ساتھ اطمینان بخش نہیں رہتا ہے، جس وجہ سے آئے دن تو تو میں میں ہوتے رہتا ہے۔ وہی کسٹمر کا الزام ہے کہ برانچ منیجر سے اس کی شکایت کی تو انہوں نے میرے بات پر کوئی توجہ نہیں دیا۔ ادھر متاثر اکاؤنٹ ہولڈر نے اس کی تحریری شکایت مےناٹاڈ تھانہ انچارج کو دی لیکن تھانہ انچارج درخواست لینے سے انکار کر گئے جس کو لے کر شکار نے ڈی جی پی آفس پٹنہ کو آن لائن کمپلین درج کرائی جس کا ٹوکن نمبر 201807030012 درخواست گزار کو فراہم کر مناسب کارروائی کرنے کی یقین دہانی کرائی گئی ادھر متاثرہ کہتے ہیں کہ اگر سی سی ٹی وی کیمرہ کی جانچ پڑتال کی جاتی ہے تو حقیقت سے آ جائے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close