ہندوستان

اگلے سال پانچویں بڑی معیشت بنے گا ہندوستان :وزیر خزانہ ارون جیٹلی

نئی دہلی: وزیر ِخزانہ ارون جیٹلی نے بدھ کے روز کہا کہ اگلے سال برطانیہ کو پیچھے چھوڑکر ہندوستان دُنیا کی پانچویں بڑی معیشت بننے کا امکان ہے۔مسٹر جیٹلی نے یہا ں انڈین کمپیٹین کمیشن کی نئی عمارت کے افتتاح کے موقع کے پر کہا کہ اگلے 10 سے 20 سالوں میں ہندوستان دنیا کی تین بڑی معیشت میں شامل ہونے کی مکمل صلاحیت ہے۔اس سال ہندوستان فرانس کو پیچھے چھوڑ کردُنیا کی چھٹی بڑی معیشت بنا ہے، اور اگلے سال برطانیہ کو پیچھے چھوڑ کر پانچویں پائیدان پر آ جائے گا۔انہوں نے کہا کہ دنیا کی معیشت سست رفتار سے آگے بڑھ رہی ہیں۔ وزیرِخزانہ نے بڑھتی معیشت میں مسابقتی کمیشن کے کردار کا ذکر تے ہوئے کہا کہ ہندوستان کی معیشت میں کئی گُنا زیادہ اضافہ دیکھا جا چُکا ہے ، کئی شعبوں میں تیزی سے ہورہے اضافے سے کئی گھریلو اور بین الاقوامی بڑی کمپنیاں سامنے آئیں ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ جب معیشت بڑی ہو رہی ہے تو ایسے میں ہوسکتا ہے کچھ لوگ بازار کے قواعد وضوابطکاا حترام نہیں کریں، ملی بھگت کریں اوروہ اپنے منافع سے فائدہ اُٹھا کر مسابقت کو متاثر کرنے یا قیمتوں کو متاثر کرنے کی کوشش کریں گئے ۔اس لئے ضم اور حصول کے لئے ریگولیٹری میکانزم کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ بہت بڑ ی تبد یلیاں ہیں اور اس لئے بازار پر ان کا اثر بھی بڑا ہی گا ۔ مسڑ جیٹلی نے ملک کے مشرقی علاقے میں ترقی کے امکانات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ تعمیر و ترقی کو رفتار دینے والے بہت سے علاقے ہیں ۔ہندوستان میں شمالی، جنوبی اور مغربی علاقوں میں تعمیر و ترقی ہوئی لیکن مشرقی علاقوں کو اب بھی تیزی سے ترقی کرنے کی ضرورت ہے۔اس موقع پر کمیشن کے کار گذار چیرمین سُدھر متل ، کمپنی امور کے سیکریڑی انجتی سرینو کمیشن کے ارکا ن اور سنیئر وکلا موجود تھے ۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close