بہارپٹنہ

این ایچ مرمت کاپیسہ نہیں دے رہی مرکزی سرکار

نئی نسل کے انجینئروں سے معیاری کام کی توقع :نتیش کمار

پٹنہ:بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے آج کہاکہ نئی نسل کے نوتقرر اسسٹنٹ انجینئر وں سے تعمیراتی کاموںکے معیار میں بہتری کی توقع ظاہر کی ۔وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے آج ادھیویشن بھون میں نوتقرر اسسٹنٹ انجینئروںکے اورینٹیشن ورکشاپ پروگرام کا شمع روشن کر کے افتتاح کیا ۔ پروگرام کو خطاب کر تے ہوئے وزیر اعلیٰ نے کہا کہ آج اس انعقاد کے لیے سڑک تعمیرات اور عمارت تعمیرات محکمہ کو مبارکباد پیش کرتا ہوں ۔ جن اسسٹنٹ انجینئروں کی تقرری ہوئی ہے ان کی قابلیت اور دانشمندی پر مجھے پورا اعتماد ہے ۔ سڑک تعمیرات محکمہ کے ذریعہ انہیں ٹریننگ کے توسط سے ہر چیز کی جانکاری دی گئی ہے ۔ عمارت تعمیرات محکمہ ابھی ان انجینئروں کو ٹریننگ دینے والا ہے ۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ میں نے بھی انجینئرنگ کی پڑھائی کی ہے لیکن انجینئرنگ کے شعبہ میں کام نہیں کیا اور عوامی زندگی میں آگیا ۔ اپنے انجینئر دوستوں کے ذریعہ انجینئرنگ کے شعبہ میں ہو نے والے کام کے بارے میں جانکاری ملتی رہتی ہے۔ انجینئرنگ کا طالب ہونے کے سبب مجھے آپ لوگوں کے ساتھ خصوصی لگاؤ ہے اورتوقعات بھی ہیں ۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ سال 2005 میں سرکار میں آنے کے بعد سب سے پہلے کام میں نظم و نسق بحال کیا ۔ ریاست میں قانون کی حکمرانی لاگو کی ۔ ریاست میں خراب سڑکوں کی حالت درست کر نے کو ترجیحی فہرست میں رکھتے ہوئے نئی سڑکوں کی تعمیر کے ساتھ ساتھ اپنے خرچ سے نیشنل ہائی وے کو درست کیا ۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ اسٹیٹ ہائی وے کے ساتھ ساتھ اب دیہی سڑکوں کے لیے مینٹیننس پالیسی بنا ئی گئی ہے تاکہ تمام کا رکھ رکھاؤ بہتر ڈھنگ سے ہو سکے ۔ ہم لوگوں نے ریاست کے دور دراز علاقوں سے چھ گھنٹے میں پٹنہ پہنچنے کے نشانہ کو حاصل کر لیا ہے اور اب پانچ گھنٹے میں ریاست کے کسی کونے سے پٹنہ پہنچنے کے نشانہ پر کام کیا جارہا ہے ۔ اس نشانہ کو حاصل کر نے کے لیے اور زیادہ پلوں کی تعمیر کی جارہی ہے ساتھ ہی سڑکوں کی تو سیع بھی کی جارہی ہے ۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ تمام گاؤوں ، ٹولوں کوپختہ سڑ کوںسے جوڑا جا رہا ہے ۔ گاؤں اور ٹولوں میں پکی گلی ، نالی کی تعمیر کرائی جارہی ہے تاکہ لوگ اپنے گھر سے سڑک تک بآسانی پہنچ سکیں ۔ ریاستی حکومت سڑکوں کی تعمیر پر کتنا خرچ کر چکی ہے اس کے بارے میں آپ لوگوں کو اس پروگرام میں تفصیل سے بتا یا گیا ہے ۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ جب میں مرکز میں وزیر تھا اس وقت بھی اپنے حلقہ میں عوام سے ملنے کے لیے کافی پیدل چلنا پڑتا تھا ۔ اب حالت ایسی ہے کہ کسی کو مجبوری میں پیدل چلنا نہیں پڑے گا۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ریاست میں ترقی کے کئی کام کیے گئے ہیں ۔ آبی وسائل محکمہ ، پبلک ہیلتھ اور مینجمنٹ محکمہ اور عمارت تعمیر ات محکمہ میں ایک سے بڑھ کر کام کے گئے ہیں ۔قومی سطح کے بہار میوزیم کی تعمیر کرائی گئی ۔ سمراٹ اشوک کنونشن سینٹر اپنے آپ میں مخصوص انداز کی تعمیر ہے ۔ اسی احاطہ میں سائنس سینٹر ، خوبصورت ثقافتی دروازہ اور اسٹیل اسٹرکچر سے تعمیر پانچ ہزار کی صلاحیت والا باپو ہال ہے ۔اس میں فرانس کے ایفل ٹاور سے دوگنا اسٹیل کا استعمال کیا گیا ہے ۔ یہ غیر معمولی عمارت ہے ۔
کچھ ہی دن میں پولیس بھون کا افتتاح ہو نے والا ہے ، جو مخصوص طریقہ سے تعمیر کیا گیا ہے اور آٹھ ریختر پیمانے والے زلزلے کو برداشت کر نے کی صلاحیت رکھتا ہے ۔ راجگیر میں تعمیر کیاگیا کنونشن سینٹر اپنے آپ میں مخصوص ہے اور بودھ گیا میں انٹر نیشنل کنونشن سینٹر کی تعمیر ہو نے والی ہے۔نہرو روڈ پر تین کلو میٹر ایلی ویٹیڈ پل کی تعمیر کی گئی ۔ کنگر باغ میں ایلیویٹیڈ پل کی تعمیر ہوئی ۔ چھپرا میں ایلیویٹیڈ روڈ کی تعمیر کرائی جارہی ہے ۔ بہٹا ایئر پورٹ تک ڈائریکٹ پہنچنے کے لیے ریاستی حکومت اپنے پیسے سے میجر ڈسٹرکٹ روڈپر ایلی ویٹیڈ روڈ کی تعمیر کرائے گی ۔ پولیس بھون کی تعمیر کے ذریعہ جو نئے تھانے کی تعمیر ہو رہی ہے وہ بھی اپنے آپ میں مخصوص ہے ۔ گاندھی میدان کے پاس پہلا آدرش تھانہ کی تعمیر کرائی گئی جس میں لفٹ کی سہولت فراہم ہے ۔ پٹنہ سے گیا کے لیے فور لین سڑک کی تعمیر کرائی جارہی ہے ۔ ریاست میں الگ الگ اسٹرکچر کی عمارت ، پل کی تعمیر کرائی جارہی ہے ۔ ابھی اور بھی کام ہو نا ہے ۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close