بین الاقوامی

ایک ایسی فلسطینی ریاست کا قیام ہونا چاہئے جس کی کوئی فوج نہ ہو:محمود عباس

مقبوضہ بیت المقدس :فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ محمود عباس نے ایک بیان میں کہا ہے کہ وہ ایک ایسی فلسطینی ریاست کے خواہاں ہیں جس کے پاس اپنی کوئی فوج نہ ہو۔ اس کے پاس صرف پولیس ہو اور اس کے ہاتھ میں بندوق کے بجائے صرف لاٹھی دی جائے۔عبرانی ریڈیو’کے اے این‘ کے مطابق صدر عباس نے اسرائیلی دانشوروں کے ایک وفد سے ملاقات میں کہا کہ وہ سنہ 1967ء کی سرحدوں میں خود مختار فلسطینی ریاست کا قیام چاہتےہیں۔ فلسطینی ریاست کے پاس اسلحہ ہوگا اور نہ ہی اپنی فوج ہوگی۔رپورٹ کے مطابق صدر ابو مازن نے کہا کہ وہ ایک ایسی فلسطینی ریاست کے لیے کوشاں ہے جس کے پاس فوج کے بجائے صرف پولیس ہوگی۔ پولیس کسی قسم کا اسلحہ اٹھانے کے بجائے صرف لکڑی کی لاٹھی ہاتھ میں رکھے گی۔انہوں نے کہا کہ فوج کے بجائے ہم فلسطین میں اسپتال اور اسکول بنائیں گے۔ ہماری رقوم سیکیورٹی اداروں کے بجائے عوام کی بہبود پر صرف ہوں گی۔صدر عباس سے ملنے والے وفد نے عبرانی ریڈیوکو بتایا کہ صدر محمود عباس بند کمرہ اجلاسوں کے دوران بھی انہی خیالات کا اظہار کرتے ہیں۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close