متھلانچل

بابری مسجد کی شہادت اور ڈاکٹر بھیم راؤ امبیڈکر کی برسی پر نکالا مارچ

دربھنگہ بایاں محاذ کے ریاست گیر اپیل پر پولو میدان سے بابری مسجد شہادت اور ڈاکٹر امبیڈکر کی یاد میں ’’ آئین بچاؤ ، سیکولرزم بچاؤ ‘ مارچ نکالا گیا ۔ لوہیا چوک ہوتے ہوئے لہریاسرائے ٹاور پر کامریڈ شیام بھارتی ، وشو ناتھ مشر ، لچھمی پاسوان کی صدارت میں نشست ہوئی ۔ مارچ کی قیادت بھاکپا ضلع منتری نرائن جی جھا ، ماکپا ضلع منتری منٹو ٹھاکر ، مالے ضلع سکریٹری بیدناتھ یادو ، ایس یو سی آئی سی کے سریندر دیال سومن نے کیا۔ مارچ کے اختتام پر منعقد جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ ملک کے اندر فرقہ پرست طاقتیں بی جے پی کی قیادت والی نریندر مودی حکومت نے ملک کے اندر فرقہ واریت کازہر گھول کر بھیڑ تنتر کے ذریعہ لوگوں کا قتل کروارہی ہے ۔ یوگی حکومت میں بلند شہر کا واقعہ ابھی تازہ ہے جہاں پولیس انسپکٹر سمیت دو کا قتل ہوا ہے ۔ انتخاب آتے ہی حکومت اپنے قبل کئے وعدوں سے دھیان ہٹانے کیلئے رام مندر کا راگ الاپ رہی ہے اور دھرم کے نام پر لوگوں کو بانٹ رہی ہے ۔ بابا بھیم راؤ امبیڈکر کے ذریعہ تیار آئین کو ایسی طاقتوں کے ذریعہ چلایا جارہا ہے ۔ بھیما کورے گاؤں سے لے کر ملک کے مختلف حصوں میں دلت ، اقلیت اور خاتون سمیت سماج کے کمزور طبقہ پرحملے میں بے تحاشہ بڑھوتری ہورہی ہے اور سرکار انہیں تحفظ دے رہی ہے ۔ بایاں محاذ عوام سے اپیل کرتی ہے کہ لوگ متحد ہوکر ایسے لوگوں کو منہ توڑ جواب دیں ۔ جلسہ سے خطاب کرنے والو ں میں ڈاکٹراجیت کمار چودھری ، سی پی ایم ریاستی سکریٹری للن چودھری ، راجیو چودھری ، آر کے سہنی ، انصاف منچ کے ریاستی نائب صدر نیاز احمد ، دلیپ بھگت کے نام شامل ہیں ۔
(رپورٹ:عرفان احمد پیدل )

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close