متھلانچل

بخشے نہیں جائیں گے اوقاف کی زمین غصب کرنے والے : امتیاز کریمی

سرکٹ ہاؤس میں ضلع سنی اوقاف کمیٹی کی میٹنگ منعقد، زمین کو خالی کرانے کا فیصلہ

دربھنگہ :ضلع اوقاف کمیٹی سنی وقف بورڈ کی ایک اہم نشست ضلع اوقاف کمیٹی کے صدر حافظ محمد ابو شحمہ کی صدارت اور بہار اسٹیٹ سنی وقف بورڈ کے چیف اگزیکیوٹیو افسر کی سرپرستی میں دربھنگہ سرکٹ ہاؤس میں منعقد ہوئی جس کی نظامت اوقاف کمیٹی کے سکریٹری شمشاد احمد خان نے کی۔ جبکہ عہدہ داران و ممبران کو خطاب کرتے ہوئے امتیاز احمد کریمی نے کہا کہ وقف کی زمین کو غصب کرنے والوں کی وقف بورڈ اور ضلع انتظامیہ کی جانب سے شناخت جنگی سطح پر کرائی جا رہی ہے اور بہت سارے لوگوں کی شناخت ہوچکی ہے۔ وقف کی زمین کو غصب کرنے والے بخشے نہیں جائیں گے۔ وقف ایکٹ کے مطابق سخت سے سخت سزا ملے گی اور جلد ہی اس معاملہ پر کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ اسوتھو اسٹیٹ کی زمین مقام اسراہا میں ہے جو لوگوں کے غیر قانونی طور سے قبضہ میں ہے۔ اس معاملہ میں 79لوگوں کی شناخت کی جاچکی ہے۔ مقام برہی کے درجنوں لوگوں نے وقف کی زمین کو غصب کر رکھا ہے اس کی بھی شناخت کرلی گئی ہے ۔ جلد ان کے خلاف بھی کارروائی شروع کی جائے گی۔ امتیاز کریمی نے کہا کہ وقف اللہ تعالی کی جائیداد ہے۔ اللہ تعالی کا مال غصب کرنے والوں کو دنیا اور آخر ت میں حساب دینا ہوگا۔ نشست میں ایڈیشنل کلکٹر محمد مبین علی انصاری نے اپنے خطاب میں کہا کہ وقف کے کام کو ضلع انتظامیہ کے ساتھ میں خود دلچسپی لے کر کرتا ہوں۔ وقف کے جو بھی مسائل ہیں اسے وقف بورڈ کے ساتھ ضلع انتظامیہ مضبوطی کے ساتھ حل کرے گی۔ میبن علی انصاری نے کہا کہ وقف کی زمین جن لوگوں کے قبضہ میں ہے وہ کارروائی ہونے سے پہلے زمین کو آزاد کردیں۔ میٹنگ میں اتفاق رائے سے یہ طے پایا گیا کہ دربھنگہ ضلع میں وقف کی زمین پر میرج ہال، مسافر خانہ اور دیگر فلاحی عمارت کی تعمیر کرائی جائے گی۔ امتیاز کریمی سی ای او نے یقین دلایا کہ ان سارے کاموں کا اسٹیمٹ بنا کر بورڈ کو بھیجیں یقینا یہ کام منظور کرایا جائے گا۔ روپیہ کی کوئی کمی نہیں ہوگی۔ نشست میں اوقاف کمیٹی کے صدر حافظ ابو شحمہ، سکریٹری شمشاد احمد خان، اراکین میں محمد سرفراز عالم، علی حسن انصاری، فردوس علی، منصور خوشتر، فیروز قریشی، محمد فاروق، حافظ عبد القادر، محمد آفتاب، محمد ولی اللہ، محمد یسین مٹھو، حافظ محمد ناظم، محمد مصطفی، محمدمعراج، ساجد حسین، بدر عالم وغیرہ شامل ہوئے اور اپنے نیک مشوروں سے نوازا۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close