پٹنہ

بچے قدرت کے عظیم شاہکار اور کوہِ نور ہیرے کے مانند ہیں:امتیاز احمد کریمی

وقف بورڈ کے زیر اہتمام جلسہ سیرۃ النبی وتقسیم انعامات تقریب کا شاندار اہتمام

پٹنہ :جلسہ سیرۃ النبی کے موقع پر سہ روزہ مسابقے کا اختتامی اجلاس آج بعد نماز مغرب انجمن اسلامیہ ہال ، مراد پور ، پٹنہ میں منعقد ہوا۔ اس جلسہ میں مسابقہ تقریر ، مضمون نویسی، اسلامی کوئز، نعت خوانی وقرأت میں اعلیٰ نمبرات سے کامیاب طلبا ء و طالبات کو نقد انعامات اور سرٹی فیکٹ دے کر ان کی حوصلہ افزائی کی گئی۔ مقابلہ کے ہر زمرہ کے طلباء و طالبات میں اول آنے والے کو 10000 ، دوسرا مقام حاصل کرنے والے کو7500 ،اور تیسرا انعام حاصل کرنے والے کو5000 روپے دئیے گئے۔ جب کہ پانچ طلبا ء و طالبات کو تشجیعی انعام کے طور پر 2500 سو روپے دئیے گئے۔انعامی تقریب شروع ہونے سے قبل سنی وقف بورڈ کے چیف ایکز کیو ٹیو افسر امتیاز احمد کریمی نے افتتاحی اور خیر مقدمی کلمات پیش کئے۔ انہوں نے اپنے خطاب میں کہا کہ آج کا دن بہت ہی یاد گار اور خوشی کا دن ہے۔ آج ہم ان بچوں کو انعامات سے نواز رہے ہیں جنہوں نے اپنی صلاحیت کا بھر پور مظاہرہ کیا۔ بہت سارے بچے و بچیوں نے اعلیٰ نمبرات حاصل کرکے ثابت کر دیا کہ ہم تعلیم کے ہر شعبہ میںخود کو کامیابی سے ہمکنار کرانے کا حوصلہ رکھتے ہیں۔ گذشتہ مہینہ میتھ و سائنس وقف اولمپیاڈمیں بھی بچے و بچیوں کی اعلیٰ کارکردگی بھی ہمارے لئے خوش آئند ہے۔ ہم چاہتے ہیں کہ ہمارے بچے ہر مقابلہ مسابقہ میں شرکت کرے ، کسی بھی مقابلہ جاتی امتحانات میں پیچھے نہ رہے۔

پروگرام کے دوران سامعین۔

انہوں نے سرپرست و گارجین حضرات سے کہا کہ آپ کے بچے قدرت کے عظیم شاہکار اور کوہِ نور ہیرے کے مانند ہیں، ضرورت ہے کہ آپ انہیں اچھے سے تراش کر شاندار، چمکدار، جاندار اور آبدار بنائیں۔ انہوں نے کہا کہ بچے تعلیم کے ہر شعبے میں زیادہ سے زیادہ ترقی کریں۔ اور اعلیٰ سے اعلیٰ مقام حاصل کریں ۔ ساتھ ہی ساتھ اپنے دین اور اپنی شریعت کو اپنی زندگی میں بنائیں رکھیں۔ عصری تعلیم میں آپ کی ترقی اسی وقت با معنی ہو سکتی ہے جب آپ نے دینی تعلیم اورشریعت محمدی پر اپنی زندگی کو گذارا۔ موصوف کریمی نے کہا کہ آج بہت ہی بابرکت مجلس کا اہتمام ہوا ہے۔ اس مجلس میں جہاں کامیاب طلبا ء و طالبات نوازے جائیں گے وہیں رسولِ رحمت کی سیرۃ پر علماء کرام کی بیش قیمتی تقاریر بھی ہوں گی۔ جناب کریمی نے سیرۃ نبوی ؐ پر بھی مختصر مگر جامع باتیں کہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہر گھر میں اسوہ حسنہ پر عمل کی ضرورت ہے۔ہر آدمی اپنی زندگی کو سیرت رسولﷺ کی روشنی میںگذاریں۔ انہوں نے اپنی باتوں کو ’’ کی محمد سے وفا تونے تو ہم تیرے ہیں، یہ جہاں چیز ہے کیا ، لوح و قلم تیرے ہیں‘‘ جیسے شعر سے اپنی باتوں کو اختتام بخشا ۔ سنی وقف بورڈ کے چیئر مین الحاج سید ارشاد اللہ نے کہا کہ کہ علم کا کوئی متبادل نہیں ہے۔ علم کوہی ہنر بنانا ہوگا۔ تب ہی کامیابی قدم چومے گی۔ اور ریاست سمیت ملک اور بیرون ملک میں تعلیم کے ذریعہ ہی آگے بڑھنے کا حوصلہ ملے گا۔ جیسا کہ آپ کو معلوم ہے حسب روایت انجمن اسلامیہ ہال میں ولادت نبوی کے موقع پر جلسہ سیرۃ النبی کا انعقاد کیا جاتا ہے اور اس موقع پر اسکول اور مدارس کے بچوں کے درمیان مسابقہ کا بھی اہتمام کیاجاتا ہے۔اس مسابقہ میں شامل ہونے والے بچے و بچیوں انعام واکرام سے و میڈل سے نوازا بھی جاتا ہے۔ آپ تمام گارجین حضرات سے میری اپیل ہے کہ اپنے بچے و بچیوں کو تعلیم سے آراستہ کرنے کی ہر ممکن کوشش کریں۔ جناب ارشاد اللہ نے کہا کہ نتیش حکومت سے قبل دوسری حکومتوں میں تعلیم کے تئیں اتنی بیداری نہیں تھی۔ نتیش سرکار کے آنے سے ایک طرح سے بچے و بچیوں کی تعلیم بالکل مفت ہو گئی ہے۔ اور بچوں کے لئے اسکالر شپ اور اعلیٰ تعلیم کے لئے کم شرح پر قرض مہیا کرایا جا رہا ہے۔ اب جلد ہی اس تاریخی انجمن اسلامیہ ہال کا تعمیر نو کیا جانا ہے۔ اور اس کو گرائونڈ+6 بنایا جانا ہے۔ تاکہ اس جگہ سے دینی و عصری کاموں کو فروغ دیا جا سکے ۔ آپ لوگوں سے میری گذارش ہے کہ اس نیک کام میں ہمارا تعاون دیں تاکہ ملت کا یہ سرمایہ جلد سے تعمیر نو ہو کر تیار ہو جائے۔ اس کے بعد جلسہ سیرۃ النبی کا باضابطہ آغاز ہوا جس میں پٹنہ کے معروف علمائے دین نے حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی سیرت مبارکہ پر بھر پور روشنی ڈالی۔ سامعین علماء کی بصیرت افروز تقریر سے اپنے ذہن و قلوب کو روشن و منور کیا۔مقررین میں مولانا شکیل قاسمی، شمیم احمد منعمی،مولانا شبلی قاسمی،مولانا مشہود ندوی وغیرہ نے سیرت رسولﷺ پر بصیرت افروز باتیں کہیں ۔ جلسہ سیرۃ النبی ﷺدیر رات جاری رہا۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close