بہارپٹنہ

بڑھتے جرائم کے خلاف جن ادھیکار پارٹی کا راج بھون مارچ

پٹنہ:جن ادھیکار پارٹی کے سرپرست اور ایم پی پپو یادو کے گورنر ہائوس مارچ کے دوران جن ادھیکار پارٹی کارکنان اور پولیس کے درمیان آج راجدھانی پٹنہ میں پر تشدد جھڑپ ہوگئی ۔ اس جھڑپ میں میں جن ادھیکار پارٹی کارکنان نے سڑک پر آتشزنی کر کے پولیس پر پتھرائو کیا۔ پولیس نے جوابی کارروائی کرتے ہوئے پہلے واٹر کینن کا استعمال کیا ۔ مشتعل کارکنان پر قابو پانے کےلئے پولیس نےاس کے بعد لاٹھی چارج کرتے ہوئے آنسو گیس بھی چھوڑے ۔ مظاہرین کے پتھرائو میں جن ادھیکار پارٹی کا ایک کارکن شدید طور پر زخمی ہوگیا۔ گردنی باغ کے تھانہ انچارج کا سر پھٹ گیا۔ پولیس کے لاٹھی چارج میں کئی کارکنان کے زخمی ہونےکی خبر ہے۔ مظاہرین کی بھیڑمیں فائرنگ کی بھی اطلاع ہے۔ پولیس پر پتھرائو اور تشدد کےلئے جن ادھیکار پارٹی کارکنان کے خلاف ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔
بہار کو خصوصی ریاست کا درجہ دینے اور جرائ میں اضافہ کے ساتھ ساتھ بدتر نظم و نسق کو لے کر جن ادھیکار پارٹی نےجمعہ کو راج بھون مارچ کا انعقاد کیا تھا۔ اس مارچ کی قیادت پارٹی کے سرپرست اور ایم پی پپو یادو خود کر رہے تھے۔ گردنی باغ میں جمع ہوئے جن ادھیکار کارکنان نے جوں ہی راج بھون کی طرف کوچ کرنا چاہا ، تو پولیس نے لوہے کا بیریکیٹنگ کر کے مظاہرین کو آگے بڑھنےسے روک دیا۔ جن ادھیکار پارٹی کارکنان اس درمیان سول سرجن دفتر کے پاس سڑک پر پوال بچھا کر آتشزنی کر نے لگے۔موقع پر موجود پٹنہ پولیس کی جانب سے مظاہرین پر واٹر کینن کا استعمال کر کے پانی کی بوچھار کی گئی ۔ اس کے بعد مظاہرین نے پولیس پر پتھرائو شروع کر دیا۔ مظاہرین کے اس پتھرائو میں جن ادھیکارپارٹی کے ایک کارکن کا سر پھٹ گیا،وہ لہولہان ہوکر سڑک پر گر پڑا۔ اس کی حالت کافی تشویشناک بتائی جارہی ہے ۔ اسے بے ہوشی کی حالت میں پی ایم سی ایچ میں داخل کرایا گیا ہے۔
جن ادھیکار پارٹی کے مطابق زخمی کارکن کا نام پنکج ہے۔ اس پتھرائو میں گردنی باغ کے تھانہ انچارج منورنجن بھارتی کا بھی سر پھٹ گیا ہے۔ انہیں بھی علاج کےلئے اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ مظاہرین کے پتھرائو سے پولیس اہلکار بھاگتے ہوئے نظر آئے۔ بعد میں پولیس نے مجمع کو منتشر کرنے کےلئے لاٹھی چارج کرتے ہوئے آنسو گیس کا بھی استعمال کیا ۔ جس سے مظاہرین منتشر ہوگئے۔ تقریبا ایک درجن سے زائد آنسو گیس کے گولے چھوڑے گئے ۔
بعد میں پولیس اور انتظامیہ کے گھیرے میں پپو یادو کو راج بھون لے جایا گیا۔جن ادھیکار پارٹی (ڈیمورکریٹک) کا پانچ رکنی وفدنے ریاستی صدر اخلاق احمد کی قیادت میں راج بھون جاکر گورنر کے سینئر افسر سے ملاقات کی اور بہار میںبڑھتے جرائم ، گنجن کھیمکا کے قتل کی سی بی آئی جانچ ، پورے بہار کو خشک سالی قرار دینے ، دھان خریداری مرکز میں بے ضابطگی اور دلالوں کے ذریعہ لوٹ کی باتوں سے آگاہ کرایا۔وفد میں اخلاق احمد کے علاوہ قومی جنرل سکریٹری اعجاز احمد، قومی جنرل سکریٹری و ترجمان پریم چندسنگھ، قومی جنرل سکریٹری راجیش رنجن پپو ، ریاستی جنرل سکریٹری ارون کمار سنگھ شامل تھے۔راج بھون سے نکلنے کے بعد پپو یادو زخمی کارکن پنکج سے ملاقات کے لئے پی ایم سی ایچ گئے اور انہیں ہر ممکن تعاون کا وعدہ کیا۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close