بہار

بہارمیں‌صدرراج نافذ کیاجائے:مانجھی

اقتدار میں بنے رہنے کے لئے نتیش کمار کچھ بھی کر سکتے ہیں،کوئی بھی جرائم پیشہ چاہے کچھ بھی کر سکتا ہے اور انتظامیہ ہاتھ پر ہاتھ دھرے بیٹھا ہے۔

گیا : بہار کے سابق وزیر اعلی جتن رام مانجھی نے بھوجپور ضلع کے بہیامیں ایک خاتون کو برہنہ کر پورے بازارمیں گھمانے کے واقعہ کو ریاستی حکومت کی بڑی ناکامی قرار دیتے ہوئے ریاست میں صدر راج نافذ کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔مسٹر مانجھی نے آج یہاں صحافیوں سے بات چیت میں کہا کہ بہار کے لئے یہ واقعہ بہت ہی شرمناک ہے۔اور یہ اشارہ ہے کہ بہار میں قانون کا راج ختم ہو گیا ہے۔کوئی بھی جرائم پیشہ چاہے کچھ بھی کر سکتا ہے اور انتظامیہ ہاتھ پر ہاتھ دھرے بیٹھا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بہار میں قانون کا راج ختم ہو گیا ہے. ایسے میں وزیر اعلی نتیش کمار کو فوری طور پر اپنے عہدے سے استعفی دینا چاہیے۔ہندوستانی عوام مورچہ (ہم) کے کنوینر نے کہا کہ وزیر اعلی کے آبائی ضلع نالندہ میں کچھ دن پہلے ایک خاتون کو زندہ جلایا گیا لیکن مسٹر کمار کہتے ہیں کہ قانون اپنا کام کرے گا۔ اس طرح کی باتوں سے واضح ہو گیا ہے کہ ان کے لئے اب کچھ بھی باقی نہیں رہ گیا ہے۔ اس بہار کوشرمسار کر دینے والے واقعات ہیں۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حالات کو دیکھتے ہوئے وہ مطالبہ کرتے ہیں کہ ریاست میں صدر راج لگا دیا جانا چاہئے۔مسٹر مانجھی نے وزیر اعظم نریندر مودی اور صدر رام ناتھ کوندسے بہار حکومت کو فوری طور پر برطرف کر ریاست میں صدر راج نافذکرنے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ ایک دروپدی کی وجہ مہابھارت ہو گیا تھا۔ آج ہزاروں بچیوں کے ساتھ عصمت دری کے واقعات مسلسل ہو رہے ہیں۔ دلت خواتین کو برہنہ کر پیٹاجا رہا ہے اور وزیر اعلی صرف گڈ گورننس کا ڈھنڈورا پیٹنے میں مصروف ہیں۔ہم لیڈر نے وزیر اعلی پر زبردست حملہ کرتے ہوئے کہا کہ اقتدار میں بنے رہنے کے لئے نتیش کمار کچھ بھی کر سکتے ہیں۔انہوں نے سوالیہ لہجے میں کہا کہ بہار میں قانون کا کیا حال ہے، یہ کسی سے چھپا نہیں ہے۔ اس سے زیادہ اور کیا ہو سکتا ہے۔بہار میں ‘فری فال آل ہو گیا ہے۔ کوئی کچھ بھی کر سکتا ہے۔ بہار میں قانون و انتظام پوری طرح سے ختم ہو گیا ہے۔اس سے قبل مسٹر مانجھی یہاں گاندھی میدان میں دشرتھ مانجھی وچار منچ کے بینر تلے منعقد موٹر سائیکل ریلی میں بطور مہمان خصوصی شرکت کی۔انہوں نے جھنڈی دکھا کر موٹر سائیکل ریلی کو روانہ کیا۔ پہاڑ مرد کے نام سے مشہور دشرتھ مانجھی کی برسی کے موقع پر گیا کے گاندھی میدان سے لے کر گہلورگھاٹی تک اس ریلی کا انعقاد کیا گیا تھا۔ انہوں نے دشرتھ مانجھی کو بھارت رتن دینے کا مطالبہ کیا۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close