سیاست

بی جے پی اور کانگریس میں پالیسی اور لیڈر کا فرق: امت شاہ

نرسنگھ پور: بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے صدر امت شاہ نے مدھیہ پردیش میں دوبارہ حکومت بنانے کا دعوی کرتے ہوئے آج کہا ہے کہ بی جے پی اور کانگریس میں پالیسی اور لیڈر کا فرق ہے۔مسٹر امت شاہ نے یہاں منعقد انتخابی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ راہل گاندھی آج کل بہت جلسے کررہے ہیں۔ لیکن ان جلسوں میں وہ 22 منٹ کی تقریر میں44 مرتبہ وزیراعظم نریندر مودی کا نام لیتے ہیں۔ سمجھ میں نہیں آتا ہے کہ مودی جی اور بی جے پی کے لئے انتخابی مہم چلارہے ہیں یا کانگریس کے لئے انتخابی چلارہے ہیں۔ کانگریس صدر کو مودی فوبیا ہوگیا ہے۔ جہاں دیکھو مودی۔مودی کی رٹ لگارہے ہیں۔بی جے پی صدر نے کہا کہ انتخابی بگل بج چکا ہے اور دونوں جانب کی فوجیں تیار ہیں۔ ایک طرف بی جے پی ہے جو مسٹر مودی کی قیادت میں شیوراج سنگھ کو وزیراعلی کے عہدے کا امیدوار بناکرانتخاب لڑرہی ہے، دوسری طرف کانگریس ہے جس کا نہ لیڈر طے ہے اور نہ پالیسی طے ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی اور کانگریس میں یہی فرق ہے۔ انہوںنے کہا کہ بی جے پی حکومت نے 15 برسوں میں ریاست کو بدل کر رکھ دیا ہے۔مسٹر امت شاہ نے کہا کہ ’’آج کل راہل بابا دن میں بھی خواب دیکھنے لگے ہیں۔ انہیں خواب میں آتا ہے کہ مدھیہ پردیش اور چھتیس گڑھ میں ہماری حکومت بن رہی ہے۔ خواب دیکھنے کا سبھی کو حق ہے اور میں ایسا خواب دیکھنے کے لئے راہل بابا کے حوصلے کی داد دیتا ہوں۔ لیکن راہل بابا ایسا خواب دیکھنے سے پہلے ذرا ملک میں 2014 کے بعد ہوئے انتخابات کی تاریخ اٹھاکر دیکھ لیجئے۔ جتنے بھی انتخابات ہوئے ہیں ہر جگہ کانگریس کو شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔
بی جے پی صدر نے راہل گاندھی پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ راہل بابا ہمت والا ہونا اچھی بات ہے لیکن دن میں بھی خواب مت دیکھئے۔ چیلنج دیتا ہوں ترقی پر دو دو ہاتھ کرکے دیکھ لیں۔ انہوں نے کہا کہ سال 2003 تک جب یہاں بنٹادھر کی حکومت تھی۔ ریاست میں کہیں تین تو کہیں چار گھنٹے بجلی آتی تھی۔ شیوراج سنگھ چوہان کی قیادت والی بی جے پی حکومت نے 24 گھنٹے بجلی فراہم کرانے کاکام کیا ہے۔ کانگریس کے زمانے میں ریاست میں کل 2900 میگاواٹ بجلی کی پیداوار ہوتی تھی۔ بی جے پی حکومت نے اسے 17700 میگاواٹ تک پہنچایا۔
انہوں نے کہا کہ کانگریسی کسانوں کی بات کرتی ہے لیکن ان کے 55 برسوں کی حکومت کے دوران ریاست میں صرف 7ء7 لاکھ ہیکٹر میں سینچائی ہوتی تھی۔ بی جے پی حکومت نے 15 برسوں میں اسے 40 لاکھ ہیکٹر تک پہنچایا۔انہوں نے کہا کہ مسٹر بنٹادھر کے وقت میں کبھی حکومت نے کسانوں سے گیہوں، مکئی، دھان، سویابین نہیں خریدا۔ شیوراج حکومت نے کسانوں کی مددگار قیمت پر اناج کا ایک ایک دانہ خریدنا شروع کیا۔ کانگریس حکومت کا آخری بجٹ 21667 کروڑ کا تھا، جسے کئی گنا اضافہ کرکے شیوراج حکومت نے 185564 کروڑ تک پہنچایا۔مسٹر امت شاہ نے کہا کہ وزیراعظم نریندر مودی دنیا کے کئی ملکوں میں گئے ہیں جہاں بھی جاتے ہیں انہیں کافی عزت ملتی ہے۔ وزیراعظم مودی نے دنیا میں ہندوستان کے وقار میں اضافہ کرنے کا کام کیا ہے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close