متھلانچل

بی جے پی نے میتھل برہمن کو کیا نظر انداز ، مودی حکومت میں دربھنگہ کی ترقی پر لگا بریک :فاطمی

مرکزی اور ریاستی حکومت پر جم کر برسے سابق وزیر ،کہا عدم اعتمادکی تحریک سے چناؤ کے مدے طے

دربھنگہ : ملک میں پارلیمانی انتخاب2018میں ہو یا 2019میںعدم اعتماد تحریک کی وجہ سے آئندہ چناؤ کے مدے طے ہوگئے ہیں اور ایک رحجان سامنے آگیا ہے کہ اس بار اپوزیشن پارٹیاں جوکئی جہتوں میں بٹی ہوئی تھی یو پی اے یا عظیم اتحاد ملک اور ریاست کے اندرسوچھ سمجھ کر مدوں کی بنیاد پر اچھی پارٹیوں کے اتحاد کے ساتھ چناؤ میں اترے گی ۔مذکورہ باتیں سابق وزیر مملکت محمد علی اشرف فاطمی نے اپنی رہائش گاہ خواجہ سرائے پر نامہ نگاروں سے خطاب کرتے ہوئے کہی ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہمارے پاس ملک کے مفاد میں کئی سوالات ہیں جس کا جواب ریاستی اور مرکزی سے جاننا چاہتے ہیں ۔ ریاستی حکومت سے جاننا چاہتے ہیں کہ وزیر اعلی کا سات عزائم پروگرام میںجو بدعنوانی ، لوٹ اور پیسوں کی بربادی ہورہی ہے اس پر روک لگے گی یا نہیں؟ ۔ آج شرا ب بندی قانون کے نام پر لاکھوں غریب دلت نوجوان جیلوںمیں بند ہیں ۔شراب بندی قانون کے باوجود شراب کی ہوم ڈیلوری کیوں ہورہی ہے ؟مسٹر فاطمی نے شک شبہ کی بنیاد پر غریب دلت نوجوانوں کو جیلوںمیں ٹھوسنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ویسے لاکھوں غریب اور پسماندہ لوگ جو رشوت نہیں دے سکتے ہیں وہ جیل میں سڑ رہے ہیں۔ پولیس اور شراب مافیا کہیں نہ کہیں ملے ہوئے ہیں تبھی تو نیپال، بنگال ، جھارکھنڈ اور یوپی سے شراب ہی نہیں دوسری چیزیں بھی نشہ کیلئے لائی جارہی ہیں ۔ اربوںروپئے کے رینو کا بہار سرکار کو نقصان ہورہا ہے اور یہی رقم افسران اور دھندے بازروں کیجیب میں جارہی ہے ۔ غریب کے گھر، کھیت ،کھلیہان میں شراب رکھ کر انہیں پھنسایا جارہا ہے ۔جناب فاطمی نے وزیر اعظم نریندر مودی کی شدید نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم بتائیں کہ سوا لاکھ کڑور روپئے بہار کو دینے کاجو اعلان کیا گیا تھا ا سمیں کتنا پیسا بہار کو دیا گیا ہے؟ خصوصی ریاست کے درجہ کا کیا ہوا ؟ ۔روزگار دینے کے وعدے کا کیا ہوا ؟ بہار میں روزگار کی حالت اتنی بری ہوگئی ہے کہ اب تو ٹیچر بننے کیلئے بی ٹیک اورایم ٹیک انجینئروں سے فارم جمع کروایا گیا ہے ۔ملک اور ریاست میں ٹیکنو کریٹ بے روزگار بیٹھے ہوئے ہیں ۔ ڈوکلام میں چین اور سرحد پر پاکستان اوراس کے دہشت گرد گھسے جارہے ہیں ۔ مہنگائی کا یہ عالم ہے کہ مہنگائی کی شرح مجموعی طور پر 5.6فیصد تک پہنچ گئی ہے ۔ آنے والے دنو ںمیں مزید مہنگائی بڑھنے والی ہے ،سرکار اس کیلئے کیا کررہی ہے ۔؟ ملک بھر کے ٹرانسپورٹر کئی دنوں سے ہڑتال پر ہیں ۔ ایک ڈالر کا ویلو 72روپئے انڈین ہوگیا ہے ۔ملک کی کرنسی کنتی گر گئی ہے ۔ ؟یہ وہ مدے ہیں جو اس بار پارلیمانی انتخاب میں چناوی ایشو بنیں گے ۔ سابق وزیر نے مزید کہا کہ وزیر اعظم ہر مہینے دوچار ملک کا دورہ کرتے ہیں ، اس پر بھی ان کو یہ ناز ہے کہ بتاؤ کوئی دوسرا وزیر اعظم یہاں آیا ہے ۔ وزیراعظم کو ملک سنبھالنا ہوتا ہے اور جس وزیر خارجہ کوملک ملک گھومنا تھا وہ نہیں معلوم کتنی جگہ گئی یا نہیں ! لیکن وزیر اعظم ہر جگہ پہنچ گئے اور بھارے کا آدمی رکھ کر مودی مودی کا نعرہ لگوانااپنی کامیابی سمجھتے ہیں ۔اب تک اٹھارہ سو کڑور روپئے ان کے دورہ پر خرچ ہوچکے ہیں ۔ وزیر اعطم کو بتانا چائیے کہ اس سے ملک کو کیا فائدہ پہنچا ہے۔ یو پی اے نے سواپانچ سو کڑو ر میں رافیل خریدا تھا ،لیکن مودی جی وہاں پہنچ کر سولہ سو کڑور دے کر چلے آئے ۔ ہجومی تشدد پر نکتہ چینی کرتے ہوئے فاطمی نے کہا کہ ہندو مسلم میں بھائی چارہ قائم رہے ، نوجوانوں کو روزگار ملے ، کسانوںکو مناسب قیمت ملے اس کیلئے کام کرنے کی ضرورت ہے ۔ بدعنوانی پر مودی حکومت کو گھیرتے ہوئے فاطمی نے کہا کہ جہاں جہاں بی جے پی کی حکومت ہے جیسے مدھیہ پردیش ، مہاراشٹر ، گجرات ، راجستھان ، جھارکھنڈ اور اتر پردیش ہر جگہ بدعنوانی انتہاء کو پہنچی ہوئی ہے ۔ بدعنوانی میں غرق بی جے پی والے اپوزیشن پارٹیوں کو سرکاری ایجنسی کا سہارا لے کر بدنام کرنے میں لگی ہوئی ہے ۔مودی حکومت میں بدعنوانی کا یہ عالم ہے کہ ہندوستان کے تیس ہزار ارب پتوں میں سے آدھے لوگ بوریا بستر سمیٹ کر ملک سے باہر چلے گئے ہیں ۔ فاطمی نے کہا کہ بہار میں کہنے کو تو ڈبل انجن کی گاڑی تیزی سے چل رہی ہے لیکن ایک انجن دہلی تو دوسری کلکتہ کی طرف جارہی ہے اب بتائیںوکاس کی گاڑی کیسے چلے گی ۔ اخیر میں فاطمی نے بہار اور مرکزی حکومتوں کو ناکام قرار دیتے ہوئے کہا کہ بی جے پی نے دربھنگہ کے میتھل برہمنوں کو جنہوں نے بھارتیہ جنتا پارٹی کا پورا ساتھ دیا ہے اوراس علاقہ سے ایم پی جیت کر جانے والے کرتی جھا کو عہدہ دینا ،وزرات دینا تو دور کی بات ہے انہیں عزت تک نہیں دی گئی ہے۔ اب تک سسپنڈ کرکے رکھا گیا ہے جوکہ میتھل برہمن کو ذلیل کرنے اوردربھنگہ کی ترقی کو روکنے جیسا ہے ۔ہماری پارٹی نے برہمن کو ترجیح دی ہے اور آج منوج جھا راجیہ سبھا رکن بنائے گئے ہیں ۔ میتھل برہمن کو نظر انداز کرنے کا جواب دینا بی جے پی کو دینا چائیے ۔فاطمی نے مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا کہ جتنا جلدہوسکے دربھنگہ کو راجدھانی ٹرین کا تحفہ ملے اور دربھنگہ ایئر پورٹ کو انٹر نیشنل ایئر پورٹ بنایا جائے تاکہ دربھنگہ دنیا سے جڑ سکے اور یہاں کی ترقی ہوسکے ۔ پریس کانفرنس میں ضلع صدر رام نریش یادو ، سابق ایم ایل اے ہرے کشن یادو ، ضلع ترجمان محمد راشد جمال سمیت بڑی تعداد میں پارٹی کارکنان موجود تھے ۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close