بہارپٹنہ

تیج پرتاپ نےایشوریا سے طلاق کیلئے کورٹ میں دی عرضی

پٹنہ :راشٹریہ جنتادل کے صدر لالو پرساد یادوکےبڑے بیٹےاور سابق وزیر صحت تیج پرتاپ یادو نےاپنی اہلیہ ایشوریا رائے سے طلاق لینے کیلئے آج عدالت میں عرضی داخل کی۔ تیج پرتاپ یادو نے پٹنہ سول کورٹ میں ہندو میرج ایکٹ کی دفعہ 13( سی ) (1 اے ) کے تحت اہلیہ ایشوریا رائے سے طلاق کیلئے عرضی دائر کی ہے۔جس کا نمبر 1208/2018 ہے۔ اس معاملے کی سماعت کیلئے عدالت نے 29 نومبر کی تاریخ مقرر کی ہے۔ تیج پرتاپ یادو کی شادی اسی سال بارہ مئی کو ہوئی تھی۔لیکن اب وہ ایشوریا رائے کے ساتھ نہیں رہنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے اپنی عرضی میں ایشوریا رائے پر خود کو ذہنی اذیت پہنچانے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ایشوریا کے ساتھ نہیں رہنا چاہتے ہیں۔ ایشوریا میں ان کو اپنی رادھا کی جھلک نظر نہیں آتی ہے۔ اس خبر کے عام ہونے کے بعد ان کے سسر چندریکا رائے اپنی اہلیہ اور بیٹی ایشوریا رائے کے ساتھ رابڑی دیوی کی رہائش گاہ پہنچے ۔ تھوڑی دیر بعد رابڑی دیوی کی بڑی بیٹی میسا بھارتی بھی وہاں پہنچیں۔ ادھر طلاق کی عرضی داخل کرنے کے بعد تیج پرتاپ اپنے والد لالو پرساد یادو سے ملاقات اور صلاح ومشورہ کیلئے رانچی روانہ ہوگئے تھے۔ مگر ان کی والدہ رابڑی دیوی نے ان سے فون پر رابطہ قائم کر کے فوراََ گھر لوٹنے کی ہدایت کی۔ جس کے بعد انہوں نے رانچی کا پروگرام ملتوی کردیااور گھر لوٹ آئے۔سمجھا جاتا ہے کہ رابڑی کی رہائش گاہ پر دونوں خاندانوں کے درمیان اس مسئلے پر بات چیت چل رہی ہے اور تیج پرتاپ کو سمجھانے اور منانے کی کوشش جاری ہے۔ لالو یادو اوران کی فیملی کیلئے یہ عرضی بہت بڑی مصیبت بن کر سامنے آئی ہے۔ادھر رانچی کے اسپتال میں زیر علاج لالو یادو کو بھی اس خبر سے گہرا صدمہ ہوا ہے۔ بتایا جارہا ہے کہ اس خبر کو سننے کے بعد ان کی طبیعت بگڑ گئی ہے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close