بہارمتھلانچل

جہیز کے لئے نوشادی شدہ کوجلا کرمارا

بتیا:مغربی چمپارن ضلع کے يوگاپٹی تھانہ علاقہ کے پیپرپاتی گاؤں میں دو لاکھ روپے کے لئےنوشادی شدہ کو جلا قتل کرنے کا واقعہ پیش آیا ہے۔ واقعہ کے سلسلہ میںمہلوکہ کے ولد يوگاپٹی تھانہحلقہ کے سریسيا گاؤں باشندہ علی امام خاں نے مقامی تھانہ میں درخواست دے کر مقتولہ کے سسر کلام خان ساس نظرل خاتون نند لاڈلی خاتون اورشوہرکے بڑے بھائیعبداللہ خان پر دو لاکھ روپے جہیز کے لئے نہیں دینے پر جلاکر مارنے کی ایف آئی آر درج کرائی ہے۔ دیے درخواست میں مقتولہ کے والد علی امام خاں نے بتایا کہ اسی سال تین ماہ قبل تھانہ حلقہ کے پپیرپاتی گاؤں باشندہ کلام خان کا بیٹا عمر خان کے ساتھ ان کی بیٹی روزی كخاتون عمر انیس سال کی شادی ہوئی تھی۔ لیکن شادی کے بعد سے ہی جہیز دو لاکھ روپے کا مطالبہ کیا جائے لگا۔ کئی بار اس نے سسرال والوں کی چھوٹے چھوٹے مطالبات کو پورا بھی کیا گیا۔ لیکن پھر بھی جہیز کے لئے ان کی بیٹی کو جلا کر مار ڈالا۔ انہوں نے بتایا کہ ان کی بیٹی کو اس کے سسرال والے 12 جولائی کی رات سازش کے تحت كکراسن تیل چھڑک کر جلا دیا۔ اس کے بعد اسے علاج کے لئے بتیا ایم جےکے اسپتال لے جایا گیا جہاں ابتدائی علاج کے بعد ڈاکٹروں نے پٹنہ ریفر کر دیا۔پٹنہ میں علاج کے دوران سنیچر کی شام اس کی موت ہوگئی۔لاش گھر پہنچے کی خبر پر یوگا پٹی تھانہ کی پولس نے لاش کو قبضہ میں لے پوسٹ مارٹم کے لئے بیتا بھیج دیا۔واقعہ کے بعد ملزمین گاؤں کو چھوڑ کر فرار ہوگئے ہیں۔ تھانہ صدر ویوککمار جیسوال نے بتایا کہ درخواست کی روشنی میں ایف آئی آر درج کر کاروائی کی جا رہی ہے اور ملزمان کی گرفتاری کے لئے چھاپے ماری کی جا رہی ہے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close