پٹنہ

زراعت اور اعلیٰ تعلیم کے فروغ میں جرمنی بہار کی مدد کا خواہاں 

جرمنی کے قونصل جنرل نے گورنر ستیہ پال ملک سے کی رسمی ملاقات

پٹنہ:گورنر ستیہ پال ملک سے آج جرمنی کے قونصل جنرل ڈاکٹر مائکل فینر نے راج بھون پہونچ کر رسمی ملاقات کی جناب ملک نے مائکل فینر کو بہار کی پر وقار تاریخ وثقافت سے روبرو کراتے ہوئے کہا کہ بہار کے لوگ محنتی و با صلاحیت ہوتے ہیں۔گورنر نہ انہیں بہار کے تاریخی مقامات بدھ گیا ،نالندہ ،راجگیر ،وکرم شیلہ ،ویشالی وغیرہ کے تاریخی مقامات کی جانکاری دی ۔گورنر نے کہا کہ بھگوان بدھ ،بھگوان مہاویر ،ماتا جانکی ،گروگوند سنگھ مہاراج ،جیسی عظیم شخصیتوں کے بارے میں بتایا گورنر نے بتایا کہ دنیا کی قدیم ترین جمہوریت کی سرزمین بہار میں ہے۔انہوں نے قونصل جنرل کو بتایا کہ ویشالی کی پش کرمی سروور کے ہاتھوں میں لیکر ہی وہاں کے عوامی نمائندہ حلف لیتے تھے گورنر نے تعلیم کی دنیا میں مشہور نالندہ یونیورسٹی ،وکرم شیلا مہابہار کی پروقار تاریخ اور عالمی پیمانے پر ان کی مقبولیت کے بارے میں بتایا گورنر نے کہا کہ بہار زراعت کے اعتبار سے کافی زر خیز ہے ۔انہوں نے ریاستی حکومت کے تیسرے زرعی روڈ مائپ کی جانکاری دیتے ہوئے بتایا کہ گنگا ندی کے دونوں کنارے آرگینک کھیتی کے لیے ریاستی حکومت کسانوں کو ترغیب دے رہی ہے ۔گورنر نے ریاست میں اصلاحت اراضی کے نقطہ نظر سے ریاستی حکومت کے ذریعہ کی جارہی کوششوں کی جانکاری لی ۔اس موقع پر مائکل فینر نے گورنر کو بتایا کہ ان کا ملک بھارت کے ساتھ دوستانہ رشتوں میں بھر پور یقین رکھتا ہے انہوں نے کہا کہ زراعت اور اعلیٰ تعلیم کے شعبہ میں ان کا ملک بہار کی ترقی میں مدد کرنے کا خواہش مند ہے ۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close