دہلیہندوستان

سوامی اگنی ویش پر حملے کے خالاف میں ایس ڈی پی آئی کا پارلیمنٹ اسٹریٹ پر دھرنا

نئی دہلی 19جولائی۔ جھارکھنڈ میں مشہور سماجی کارکن سوامی اگنی ویش پر سنگھ پریوار، مورچہ کے کارکنوںکی طرف سے کئے گئے قاتلانہ حملے کی سخت مذمت کرتے ہوئے سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (SDPI)دہلی صوبائی شاخہ کی جانب سے پارلیمنٹ اسٹریٹ پر احتجاجی ریالی اور احتجاجی دھرنے کا انعقاد کیا گیا۔ احتجاجی ریالی اور دھرنے کی قیادت صوبہ دہلی کے کنوینرڈاکٹر نظام الدین خان نے کی۔اس موقع پر مقررین نے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی اپنے سیاسی مفاد کے لیے ملک کے مختلف حصوں میں بھیڑ کی طرف سے حملوں کو فروغ دے رہی ہے۔سنگھ پریوار کے لوگوںنے اب تک کمزور اور بے گناہ لوگوں پر اور بالخصوص مسلمانوں کو نشانہ بنا یا ہے۔ بھیڑ تشدد کو روکنے اور متاثرین کو انصاف دلانے کے لیے کوئی سنگین قدم نہیں اٹھا یا جارہا ہے۔ قابل مذمت بات یہ ہے کہ ایک مرکزی وزیر بھی بے گناہ افراد کی بے دردی سے قتل کے ملزمان کا ساتھ دیتے نظر آرہے ہیں۔چونکانے والی بات یہ ہے کہ سنگھ پریوار کی پشت پناہی سے حملے کرنے والی بھیڑ اب ایک رہنما شیشی تھرور اور ایک جانے مانے سماجی کارکن سوامی اگنی ویش تک پہنچ گئے ہیں۔اس حملے کا مقصد صاف ہے کہ جو بھی بی جے پی کے خلاف اپنی زبان کھولتا ہے اس کو ڈرا دھمکا کر اس کی زبان کو خاموش کردینا ہے۔ مقررین نے مزید کہا کہ بھیڑ تنتر کی جانب سے بڑھتے ہوئے قتل کے واقعات کو دیکھتے ہوئے SDPIنے پہلے ہی بھیڑ تنتر تشدد کے خلاف سخت قانون بنانے کا مطالبہ کرتی چلی آئی ہے۔ اس معاملے میں سپریم کورٹ کے ہدایات کے بعد ہم اپنے مطالبات کو دہراتے ہوئے بھیڑ تنتر کے تشدد کو روکنے کے لیے پارلیمان میں سخت قوانین بنائے جائیں۔ مقررین نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ سوامی اگنی ویش پر ہوئے منظم جان لیوا حملے کی اعلی سطحی منصفانہ جانچ کرواکر قصورواروں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔ احتجاجی مظاہرے میں ایس ڈی پی آئی قومی نائب صدر اڈوکیٹ شرف الدین احمد، قومی مجلس عاملہ کے رکن و دہلی صوبائی انچارج ڈاکٹر تسلیم احمد رحمانی، محترمہ شاہین کوثر سمیت سینکڑوں پارٹی کارکنوں نے حصہ لیا۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close