جمو ں وکشمیر

سینٹرل یونیورسٹی آف کشمیر کا پہلا جلسہ تقسیم اسناد منعقد، گورنر ووہرا نے صدارت کی

سری نگر: جموں وکشمیر کے گورنر این این ووہرا نے بدھ کے روز یہاں سینٹرل یونیورسٹی آف کشمیر کے پہلے جلسہ تقسیم اسناد کی صدارت کی۔ مرکزی سرکار میں پرنسپل سائنٹیفک ایڈوائزر پروفیسر ڈاکٹر کے وجے راگھون اس موقعہ پر مہمان خصوصی جبکہ سابق چیئرمین اٹامک انرجی کمیشن آف انڈیا اور سی یو کے ، کے بانی چانسلر پروفیسر سری کمار بینرجی مہمان ذی وقار کی حیثیت سے موجود تھے۔ گورنر نے اپنے صدارتی خطبے میں یونیورسی سے فارغ ہونے والے طلباء اور ایوارڈ و اسناد حاصل کرنے والے طلباء کو نیک خواہشات دیں۔ انہوں نے کہا کہ فارغ ہونے والے طلباء پر ذمہ داری ہے کہ وہ سماج کی ترقی و بہبودی کے لئے کام کریں۔

انہوں نے کہا کہ ان طلاب کو اپنی پیشہ وارانہ اور ذاتی زندگی میں تندہی اور لگن کے ساتھ اپنے فرائض انجام دینے چاہیں۔ گورنر نے وائس چانسلر ، اُن کے رفقاء، عملے اور طلاب کو یونیورسٹی میں اچھا کام کرنے کے لئے مبارک باد دی۔ انہوں نے کہا کہ2010 میں قائم ہونے کے بعد یونیورسٹی نے مختلف چیلنجوں کے باوجود معیاری افرادی قوت تیار کی۔ گورنر نے کہا کہ یونیورسٹی کے فیکلٹی اور سکالروں نے لوگوں کے مسائل سے جڑی تحقیق کو مکمل کر کے کئی مسائل کے حل تلاش کئے۔ گورنر نے یونیورسٹی پر زور دیا کہ وہ کئی دیگر اختراعی شعبوں میں تحقیقی پروجیکٹ ہاتھ میں لیں جن میں ڈل اور وُلر جھیلوں کی صفائی، شہری علاقوں کی سائنسی طرز پر ڈیزائیننگ، ٹریفک نظامت اور کوڑا کرکٹ کو بہتر ڈھننگ سے ٹھکانے لگانا شامہ ہے۔

گورنر نے کہا کہ جموں وکشمیر میں کئی ایسے سیاسی اور جغرافیائی محرکات ہیں جن کی وجہ سے علوم پر مبنی سماج وجود میں آنے میں دقتیں پیش آرہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بیرون ریاست سے تعلق رکھنے والے کئی معروف تعلیم دان اس وقت یہاں کی یونیورسٹیوں میں طلباء کو تعلیم دے رہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آنے والے برسوں میں کافی تعداد میں ملک کے مختلف حصوں سے تعلق رکھنے والے طُلاب یہاں کی یونیورسٹیوں میں تعلیم حاصل کریں گے۔

گورنر نے کہا کہ یہ اطمینان بخش بات ہے کہ لڑکیاں بھی تعلیم کے شعبۂ میں کاریائے نمایاں انجام دے رہی ہیں اور تمام یونیورسٹیوں میں گولڈ میڈل اور توصیفی اسناد حاصل کر رہی ہیں۔ گورنر نے اساتذہ پر زو ردیا کہ وہ طلباء کے ساتھ باہمی رابطہ بنا کر ان کے مسائل کو حل کریں۔ انہوں نے کہا کہ یہ بزرگوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ نوجوانوں کی رہنمائی کر یں تا کہ وہ زندگی کے ہر ایک شعبۂ میں آگے بڑھ سکیں۔ اس سے پہلے سی یو کے، کے وائس چانسلر پروفیسر معراج الدین نے وائس چانسلر کی رپورٹ پیش کی اور یونیورسٹی کی حصولیابیوں پر روشنی ڈالی۔ اس موقعہ پر کئی ارکان قانون سازیہ،مختلف یونیورسٹیوں کے موجودہ اور سابق وائس چانسلر، فیکلٹی ممبران، طلاب، والدین اور کئی دیگر معزز شخصیات بھی موجود تھیں۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close