پٹنہ

سی بی آئی نے مظفر پور جنسی استحصال کے معاملے میں محکمہ سے دستاویزات لئے

پٹنہ: بہار کے مظفر پور گرلس شیلٹر ہوم جنسی تشدد معاملے کی تحقیقات کر رہی مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) نے آج سماجی بہبود محکمہ سے شیلٹر ہوم سے منسلک تمام دستاویزات کو اپنے قبضے میں لے لیا۔سی بی آئی کے افسر نے یہاں سماجی بہبود محکمہ کے ڈائریکٹر راجکمار سے ان کے سیکرٹریٹ میں واقع کمرے میں جاکر ملاقات کی۔ اس کے بعد مسٹر کمار نے سی بی آئی کو مظفر پورشیلٹر ہوم سے منسلک تمام دستاویزات کو ان کے حوالے کر دیا۔ اس دوران سی بی آئی کے حکام نے شیلٹر ہوم سے منسلک کچھ معاملات کیمعلہمات بھی حاصل کی۔سی بی آئی کے حکام نے اس معاملے کو لے کر کل سماجی بہبود محکمہ کے پرنسپل سکریٹری اتل پرساد سے بھی ملاقات کی تھی۔ایسا سمجھا جاتا ہے کہ سی بی آئی محکمہ اس بات کی تحقیقات کر سکتا ہے کہ معاملہ روشنی میں آنے کے ایک ماہ کے بعد ایف آئی آر کیوں کرائی گئی۔ اس معاملے میں محکمہ کی طرف سے اب تک کون کون سی کارروائی کی گئی اور اگر کارروائی نہیں کی گئی تو اس کی وجہ کیا تھی۔سی بی آئی کے ان سوالات اور دستاویزات کھنگالنے سے سماجی بہبود محکمہ کے کچھ افسران بھی اس کی زد میں آ سکتے ہیں۔سی بی آئی کے افسران گرلس شیلٹرہوم کے آپریشن کو لے کر سروس قرارداد اور وکاس کمیٹی کے کئے گئے انتخاب اور اسے اب تک جاری کی گئی رقم سے منسلک بہت سے معاملات کی معلومات مانگی ہے۔اس کے ساتھ ہی اداروں کے انتخاب کے عمل اور دی جانے والی ذمہ داری کی بھی معلومات محکمہ کو فراہم کرنے کو کہا گیا ہے۔قابل ذکر ہے کہ بہار حکومت نے مظفر پورشیلٹر ہوم جنسی استحصال کیس کی 26 جولائی کو سی بی آئی سے جانچ کرانے کی سفارش کی تھی۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close