پٹنہ

سی ڈی آر میں آئے 40 ناموں کو عام کرے سی بی آئی :پپو یادو

پٹنہ :جن ادھیکارپارٹی کے سربراہ ممبر پارلیامنٹ راجیش رنجن عرف پپو یادو نے کہا ہے کہ مظفرپور شیلٹ ہوم معامے کے عام ملزم برجیش ٹھاکر کے سی ڈی آر میں آئے 40 ناموں کو سی بی آئی عام کرے انہوں نے دعویٰ کیا کہ اس سے لیڈران افسران اور کئی سفید پوش بے نقاب ہوجائیں گے۔ بہار کےعوام کا حق ہے اس لیے ان لوگوں کا نام عام کرنے کی ضرورت ہے۔ نامہ نگاروں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے حزب مخالف پر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ دراصل برجیش ٹھاکر کے کول ڈیٹیلس کی جانچ 1992 سے ہونی چاہیے جب چھوٹن سکلا کے سامنے برجیش ٹھاکر کو کھڑا کیا گیا ۔انہوں نے سیلٹر ہوم کی واقعہ کی جانچ پر سوالیہ نشان لگاتے ہوئے کہا کہ جب برجیش ٹھاکر جیل کے اندر سے اپنے مخالفین کو جان سے مارنے کی دھمکی دلا رہے ہیں اور لگاتار لیڈران اور افسران کے ساتھ رابطے میں ہیں تو اس معاملے میں غیر جانبدارانہ جانچ ممکن نہیں ہے برجیش ٹھاکر کے آدمی ہمار پارٹی کے ضلع صدر خاتون لیڈر پریہ راج کو بھی دھمکی دے رہے ہیں۔ اس لیے جن ادھیکار پارٹی اس پورے معاملے کی جانچ سپریم کورٹ یا ہائی کورٹ کی نگرانی میں کرانے کی مانگ کی ساتھ ہی یہ بھی کہاکہ تین سال عظیم اتحاد کے ساتھ حکومت میں رہنے والے موجودہ حزب مخالف کو بھی اس معاملے پر بولنے کا حق نہیں ہے پٹنہ میں دو لڑکیوں کے موت پر انہوںنے کہا کہ خواتین کا استحصال سب سے زیادہ لیڈران اور افسران کرتے ہیں۔اس دوران انہوں نے مظفرپور کے ایک ہوٹل کا ویڈیو دیکھا کر وہ پچھلے تین سال کے دوران مظفر پور کے سبھی ہوٹلوں کے سی سی ٹیوی فوٹیج کے جانچ چاہتے ہیں تاکہ واضح ہوسکہ کہ کون لوگ خواتین کو اپنا شکار بناتے ہیں۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close