کھیل

شبھمن-شنکر کو ٹیم میں ملی راہل-پانڈیا کی جگہ

نئی دہلی: آل راؤنڈر وجے شنکر اور بلے باز شبھمن گل کو ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ (بی سی سی آئی) نے تنازعات میں گھرے ہردک پانڈیا اور لوکیش راہل کی جگہ آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کے دورے کے لیے ہندستانی ٹیم میں شامل کیا ہے۔ہندستانی بورڈ نے اتوار کو ایک بیان میں اس کی اطلاع دی۔ ٹی وی شو كافي ود کرن پرخواتین کے خلاف نازیبا تبصرہ کرنے سے دونوں ہندستانی کرکٹروں پانڈیا اور راہل کو جانچ کے سبب وطن بلا لیا گیا ہے جو اس تنازعہ کے دوران آسٹریلیا کے دورے پر ٹیم کا حصہ تھا۔ تفتیش مکمل ہونے تک دونوں ٹیم سے معطل کر دیئے گئے ہیں۔آسٹریلیا کے خلاف سڈنی میں کھیلے گئے پہلے ون ڈے میں بھی دونوں متنازعہ کھلاڑیوں کو ٹیم میں نہیں لیا گیا تھا۔ یہ میچ ہندستان 34 رنز سے ہار گیا تھا۔ بی سی سی آئی نے بیان میں کہاکہ راہل اور پانڈیا کے وطن لوٹنے کی صورت میں آل انڈیا سینئر سلیکشن کمیٹی نے آل راؤنڈر وجے شنکر اور بلے باز شبھمن گل کو ٹیم میں شامل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔بورڈ نے کہاکہ وجے شنکر ایڈیلیڈ میں دوسرے ون ڈے سے قبل ہندستانی ٹیم سے جڑ جائیں گے۔ وہ آسٹریلیا کے ساتھ ہو رہی ون ڈے سیریز میں ٹیم کا حصہ ہوں گے اور نیوزی لینڈ کا دورہ بھی کریں گے۔ شبھمن کو نیوزی لینڈ میں ون ڈے اور ٹوئنٹی 20 سیریز کے لئے ہندستانی ٹیم میں منتخب کیا گیا ہے۔ گل نے ابھی تک بین الاقوامی کرکٹ میں اپنا ڈیبو نہیں کیا ہے جبکہ شنکر نے ہندستان کے لیے پانچ ٹوئنٹی 20 بین الاقوامی میچ ہی کھیلے ہیں۔ گل سال 2018 میں آئی سی سی انڈر -19 ورلڈ کپ کے دوران پلیئر آف دی ٹورنامنٹ رہے تھے اور مڈل آرڈر کے مفید بلے باز ثابت ہوئے تھے۔ وہ رنجی کرکٹ میں شاندار فارم میں کھیل رہے ہیں اور ان کا سیزن میں اوسط 103 ہے جبکہ لسٹ اے کرکٹ کے 37 میچوں میں انہوں نے 47.72 کے اوسط سے رن بنائے ہیں۔پانڈیا نے ٹی وی شو پر خواتین کے ساتھ جسمانی تعلقات کی بات کہی تھی اور اسے لے کر کئی نازیبا تبصرے بھی کئے تھے جبکہ ان کے ساتھ موجود دیگر ٹیم کے ساتھی راہل نے بھی ان بیانات پر مضحکہ خیز جواب دیا تھا جس کے لئے دونوں کھلاڑیوں کی سوشل نیٹ ورک پر سخت تنقید ہوئی تھی۔ خود ہندستانی کپتان وراٹ کوہلی نے دونوں کرکٹرز کے بیانات کی سخت مذمت کی تھی اور کہا تھا کہ یہ ٹیم کی ذہنیت کو نہیں ظاہر کرتا ہے۔یہ تنازع ایسے وقت پیدا ہوا جب ہندستان آسٹریلیا کے دورے میں اپنی پہلی تاریخی ٹیسٹ جیت کا جشن منا رہا تھا۔ اس کے بعد پانڈیا نے ٹوئٹر پر عوامی طور پر اپنے بیان کے لیے معافی مانگی تھی ۔ اس بابت دونوں کھلاڑیوں کو بی سی سی آئی کو منظم کر رہی منتظمین کی کمیٹی کے سامنے بھی اپنا وضاحت دینا پڑی ہے۔فی الحال انکوائری تک انہیں کرکٹ کے تمام فارمیٹس سے معطل کر دیا گیا ہے۔ وہیں دونوں کے کرکٹ کیریئر پر بھی سوالیہ نشان کھڑا ہو گیا ہے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close