بین الاقوامی

شمالی کوریا اور جنوبی کوریا کے حکام کے درمیان اعلی سطحی مذاکرات کا آغا

سیول:شمالی اور جنوبی کوریا کے حکام کے درمیان پیر کو ایک اعلی سطحی میٹنگ ہونے جارہی ہے جس میں دونوں ممالک کے درمیان ممکنہ سربراہی اجلاس کے سلسلہ میں بات چیت ہو گی۔جنوبی کوریا کے ایک اخبار کے مطابق دونوں ممالک اس ماہ کے آخر میں پیانگ یانگ میں ایک سربراہی اجلاس کیلئے منصوبہ بنا سکتے ہیں۔اس سال اپریل میں شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ اور جنوبی کوریا کے صدر مون جے ان کے درمیان تاریخی ملاقات ہوئی تھی جس میں دونوں رہنماؤں نے شمالی کوریا کے دارالحکومت پیانگ یانگ میں اگلے سربراہی اجلاس کے انعقاد کو لے کر اتفاق کا اظہار کیا گیاتھا۔اخبارکوکمن البو نے جنوبی کوریا کے ایک نامعلوم افسر کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ دونوں ممالک کے درمیان یہ سربراہی اجلاس اگست کے آخری ہفتے میں ہو سکتا ہے۔جنوبی کوریا کے صدر دفتر بلیو ہاؤس کے ترجمان کم ائی كيوم نے کہا کہ دونوں ممالک کے حکام کے درمیان اس اعلی سطحی مذاکرات میں شمالی کوریا کا دورہ کرنے والے وفد، سربراہی اجلاس کا وقت اور مقام کا تعین کیا جائے گا۔قابل ذکر ہے کہ شمالی کوریا کے لیڈر کم جونگ نے اس سال جنوبی کوریا، چین اور امریکہ کے رہنماؤں سے ملاقات کرکے بات چیت کا دور شروع کیا تھا۔اس اعلی سطحی مذاکرات سے منسلک امریکی افسران نے بتایا کہ شمالی کوریا کا اپنے ایٹمی ہتھیار ختم کرنے کی تاریخ اور ان کی تعداد کا انکشاف کرنے پر اتفاق ہونا اب بھی باقی ہے۔ امریکہ کے مطابق شمالی کوریا کے جوہری ہتھیاروں کی تعداد 30 سے 60 کے درمیان ہے۔قابل غور ہے کہ سنگاپور میں 12 جون کو امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ اور شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ ان کے درمیان ہونے والی تاریخی چوٹی کانفرنس کے دوران شمالی کوریا نے امریکہ کے ساتھ ایک تاریخی سمجھوتہ کرکے جزیرہ نما کوریا سے جوہری ہتھیاروں کو ختم کرنے کی سمت میں کام کرنے اور دونوں ممالک کے درمیان امن اور خوشحالی کے عزم کا اظہار کیا تھا۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close