جھارکھنڈہندوستان

شوہر نے فون پر دی تین طلاق،بیوی نے لگایا استحصال کا الزام

رانچی:طلاق ثلاثہ پر مرکزی حکومت کے آرڈیننس لائے جانے کے باوجود طلاق کا معاملہ کم نہیں ہو رہا ہے ۔جھارکھنڈ کی راجدھانی رانچی میں فون پر تین طلاق دینے کا ایک تازہ معاملہ سامنے آیا ہے۔ متاثرہ نے اس سلسلہ میں پٹھوریا تھانہ میں معاملہ درج کروایا ہے۔ متاثرہ کی سال 2015 میں شادی ہوئی تھی۔ اطلاعات کے مطابق پٹھوریا علاقہ کی رہنے والی متاثرہ خاتون کو اس کے شوہر نے فون پر ہی تین طلاق دید ی۔ذرائع کے مطابق اس کی شادی پٹھوریا کے ہی رہنے والے صفدر سلطان عرف صدام کے ساتھ 2015 میں ہوئی تھی۔ شادی کے تین ماہ تک ازدواجی زندگی بڑی پرسکون گزری ، لیکن تین ماہ کے بعد اچانک شوہر نے زیادتی شروع کر دی۔ شوہر 15 لاکھ روپے کا مطالبہ کرنے لگا اور مار پیٹ کرنے لگا۔ اب فون پر تین مرتبہ طلاق بول کر دوسری شادی کی تیاری میں ہے۔متاثرہ نے شوہر پر زبردستی غیر فطری جنسی تعلقات قائم کرنے کا بھی الزام عائد کیا ہے۔ ساتھ ہی ساتھ سسر اور سسرال والوں پر بھی استحصال کا الزام لگایا ہے۔ خاتون کی مانیں تو اس کا زبردستی اسقاط حمل کروایا گیا اورمیکے پہنچادیا گیا۔ متاثرہ کے بھائی کا کہنا ہے کہ وہ اس مسئلہ کو لے کر پنچایت بھی گئے ، لیکن کوئی فائدہ نہیں ہوا۔سال رواں گزشتہ 21 ستمبر کو ہی پٹھوریا تھانہ میں معاملہ درج کرایا گیا ، لیکن ابھی تک کوئی کارروائی نہیں ہوئی۔ اس لئے متاثرہ نے ایس پی سے انصاف کی فریاد کی ہے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close