سیاستہندوستان

صارفین کے تحفظ سے متعلق بل مانسون اجلاس میں ہی پیش ہو:پاسوان

نئی دہلی :امور صارفین ،خوراک اور عوامی نظام تقسیم کے وزیررام ولاس پاسوان نے صارفین کے مفادات کے تحفظ کے لحاظ سے اہم صارفین تحفظ بل کو اسی اجلاس میں پیش کرنے کی آج حکومت کو صلاح دی اور اسے صوتی ووٹ سے منظور کرنے کی اپوزیشن سے اپیل کی ۔مسٹر پاسوان نے حکومت کو اس وقت یہ صلاح دی جب وہ لوک سبھا میں وقفہ سوال کے دوران ایک ضمنی سوال کا جواب دے رہے تھے ۔ریولوشنری سوشلسٹ پارتی کے رکن این کے پریم چند نے حکومت سے یہ جاننا چاہاکہ صارفین کے مفاد ات کے تحفظ اور اشیا و خدمات میں خامیوں سے متعلق شکایتوں سے نمٹنے کے لئے حکومت کس طرح کا نظام وضع کررہی ہے ۔اس پر مسٹر پاسوان نے کہاکہ لوک سبھا میں زیر التواصارفین تحفظ بل 2018ایک انقلابی بل ہے ،جس کے قانون بننے کے بعد ضلع ،ریاستوں اور قومی سطح پر صارفین سے متعلق تنازعہ کے حل کے لئے کمیشن قائم کیاجائیگا ۔انھوں نے کہاکہ بل میں مرکزی صارفین تحفظ اتھارٹی قائم کرنے کا التزام ہے ،جو صارفین کے مفادات کا تحفظ کریگا۔انھوں نے ایوان میں موجود پارلیمانی امور کے وزیراننت کمار سے درخواست کی کہ وہ 10اگست کو ایوان کے غیر معینہ مدت لئے ملتوی ہونے سے پہلے بل کو ایوان میں غوروخوض اور اسے منظور کرانے کے لئے پیش کریں ۔انھوں نے اپوزیشن پارٹیوں سے بھی اپیل کی کہ وہ اس بل کو اتفاق رائے سے منظور کرائیں ۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close