بہارمتھلانچل

ضلع میں 383نئے بوتھ بنانے کی تجویز پر غور و خوض

دربھنگہ : کلکٹریٹ کانفرنس ہال میں ضلع الیکشن افسر و ضلع مجسٹریٹ ڈاکٹر چندر شیکھرسنگھ کی صدارت میں افسران اور عوامی نمائندگان کی نشست ہوئی جس میں دربھنگہ ضلع کے تمام دس اسمبلی حلقوں میں بوتھوں کے انضمام سے متعلق دعوی اور اعتراض پر غور وخوض کیا گیا ۔ ڈپٹی الیکشن افسر سنجے کمار مشرا نے بتایا کہ الیکشن کمیشن کی ہدایت پر1400رائے دہندگان کی بنیاد پر بوتھ طے کئے جانے ہیں ۔ رائے دہندگان کواپنا ووٹ دینے کیلئے دو کیلو میٹر سے زیادہ کی دوری طے نہیں کرنا پڑے اس کیلئے بوتھوں کاانظمام و تشکیل نو ضروری ہے ۔ تمام اسمبلی حلقوں میں 383نئے بوتھ بنانے کی تجویز پرغور کیاگیا ۔ ایم پی اور ایم ایل اے کے نمائندگان اور سیاسی پارٹیوں کے ضلع صدور اور سکریٹری کے ساتھ غور وخوض کے بعد ضلع مجسٹریٹ نے کچھ تجاویزکو منظوری دے دی اور بقیہ دعوی اور اعتراض پر متعلقہ ای آر او اور اے آر او کو دوبارہ خود جانچ کرکے رپورٹ دو دنوں کے اندر بھیجنے کی ہدایت دی ۔ جانچ پڑتال کے بعد دوبارہ ۲۳؍ جولائی کو ای آر او اور اے آر او کے ساتھ نشست کرکے بوتھوں سے متعلق دعوی اور اعتراض پر آخری فیصلہ لیا جائے گا ۔ آج کی نشست میں بوتھ بنانے کیلئے تمام دعوی اور اعتراض کی لسٹ عوامی نمائندگان کو دینے کی ہدایت دی گئی ۔ نشست میں تمام اسمبلی حلقوںکے ای آر او اے آر او اور ایم پی او رایم ایل اے کے نمائندگان ، ضلع راشٹروادی کانگریس کے شیلندر موہن جھا ، آر جے ڈی کے رام نریش یادو ، جے ڈی یو کے سنیل بھارتی ، لوجپا کے گگن کمار جھا ، رام کشور جھا ، محمد اسلم ، ضلع سکریٹری سی پی آئی نرائن جھا ، ضلع رابطہ عامہ افسر کنہیا کمار وغیرہ موجود تھے ۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close