بہارمتھلانچل

فاروارڈ مورچہ کے بھارت بند کا دربھنگہ میں ملا جلااثر

دربھنگہ:ملک گیربھارت بند کا دربھنگہ شہر اور اطراف میں ملا جلااثر دیکھا گیا ۔ بھارت بند کے دوران سورن مورچہ نے بھارت بند کے دوران قوت کا مظاہرہ کیا ۔ سورن مورچہ نے بھارت بند کے دوران بڑھ چڑھ کر احتجاج کیا ۔ سڑک اور ریل لائن ، شہر اور دیہات تک سورن مورچہ نے نریندر مودی حکومت کے نئے ایس سی ایس ٹی ایکٹ کو نیا طالبانی فرمان قرار دے کر اس کے خلاف احتجاج کیا گیا ۔ سورن مورچہ کے بھارت بند کے دوران مالی حالت کی بنیاد پر ریزویشن کا زور شور سے مطالبہ کیا گیا ۔ آل انڈیا سورن مورچہ کے ذریعہ کوشیشور استھان لہریاسرائے سڑک کو مورچہ کے ضلع دفتر کے سامنے چاروں طرف سے جام کردیا گیا ۔ مورچہ کے ضلع کو آرڈینٹر شیو کمار جھا کی قیادت میں سینکڑوں لوگ سڑک پر اترے اور بہار کی نتیش حکومت اور مودی حکومت کے خلاف گھنٹوں احتجاج کیا ۔ شیو کمار جھا نے کہا کہ اونچی ذات پر ایمرجنسی تھوپی جارہی ہے ۔ جسے مورچہ کسی بھی حالت میں برداشت نہیں کرے گا۔ اونچی ذات کے ساتھ آزادی کے بعد سے آج تک صرف کھلواڑ اور سازش کی گئی ہے ۔ فور وارڈ کو جان بوجھ کر ملکی سطح پر غریب ، لاچار ، پھٹے حال اور رہائش و زمین سے محروم کیا جارہاہے ،جسے اب قطعی برداشت نہیں کیا جائے گا ۔ بند میں سورن یوا مورچہ ضلع صدر سنتوش جھا ، ضلع سکریٹری راجیش جھا ، رادھا کرشن جھا ، بچہ جھا ، ببن جھا ، موہن جھا ، نیرج کمار جھا ، سوشیل جھا وغیرہ شامل تھے ۔ وہیں سورن مورچہ کے ذریعہ لہریاسرائے کے پنڈا سرائے گمتی پر جانکی اکسپریس کے ساتھ ساتھ سمپرک کرانتی اکسپریس کو روک کر بی جے پی حکومت کے خلاف احتجاج کیا گیا ۔ سورن یوا مورچہ کے ضلع صدر سنتوش کمار جھا ، ضلع یوا مورچہ نائب صد رببن جھا کی قیادت میں سورن مورچہ کے درجنوں کارکنان نے ٹرین کو روک کر اس کے انجن پر سوار ہوگئے اور ایس سی ایس ٹی قانون کے خلاف نعرہ بازی کی ۔ذات کی ریزویشن کو ختم کرکے مالی حالت کی بنیاد پر ریزرویشن کا مطالبہ کیا گیا ۔ دوسری جانب لہریاسرائے ایکمی سڑک کو اجھول پل کے پاس جام کردیا ۔ سورن مورچہ کے سینکڑوں کارکنان ضلع نائب صدر انجنی سنگھ کی قیادت میں بانس بلا سے گھیر کر وزیر اعظم نریندر مودی اور بی جے پی حکومت کے خلاف نعرہ بازی کرتے رہے ۔ بھارت بند میں ضلع جنرل سکریٹری کیپٹن چندر شیکھر سنگھ ، بھوانی سنگھ ، انیل سنگھ ، انکت گورب ، رمن سنگھ ، درگا نند مشرا ، بم بم سنگھ ، رنجیت سنگھ ، اوید سنگھ ، شمبھو جھا ، جیو مشرا وغیرہ موجود تھے ۔ کے ایم ٹینک اسٹیڈیم کے نزدیک سڑک جام کرنے والوں میں کنہیا چودھری ، للن جھا ، پنٹو کمار ، رمن کمار پرساد سنگھ ، منیش کمار ، ویپن سنگھ ، منٹن سنگھ ، چندن سنگھ ، سبھاش سنگھ کنہیا سنگھ سمیت موجود تھے ۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close