بہارمتھلانچل

فوٹو جرنلزم آرٹ اور سائنس کا عمدہ سنگم: ڈاکٹر پربھاکرپاٹھک

پربھات داس فاؤنڈیشن اور شعبہ ہندی کے اشتراک سے سمینار

دربھنگہ :فوٹو جرنلزم آرٹ اور سائنس کا سنگم کا ہے ۔ فوٹو گرافی آرٹ ہے اور فوٹو سائنس ہے ۔ فوٹو جرنلسٹ کیلئے پرنٹ ،ڈیجیٹل میڈیا میں یکساں مواقع موجود ہے ۔ فوٹو جرنلسٹ کا کام بھی ایک رپورٹر کی طرح ہوتا ہے فرق صر ف اتنا ہے کہ رپورٹر خبر جمع کرکے لکھتا ہے اور فوٹو جرنلسٹ تصویر کے توسط سے اپنی بات رکھتا ہے ۔ مذکورہ باتیں رضا کار تنظیم ڈاکٹر پربھات داس فاؤنڈیشن اور ایل این ایم یو شعبہ ہندی کے اشتراک سے منعقد فوٹو جرنلسٹ کے عنوان سے منعقد سمینار سے خطاب کرتے ہوئے مہمان خصوصی سابق ڈین فیکلٹی ڈاکٹر پربھاکر پاٹھک نے کہی ۔ مسٹر پاٹک نے کہا کہ فوٹو جرنلزم میں مہارت ضروری چیز ہے ۔ اس میں کوئی پھیر بدل نہیں کیا جاسکتا ہے ۔ پھیر بدل کرنے سے اصلیت ختم ہوجاتی ہے۔ فوٹو جرنلسٹ میں ایمانداری اور غیر جانبدارای بھی ہونی چائیے ۔ مہمان اعزازی ڈاکٹر رام چندر ٹھاکر نے کہا کہ ویسے جرنلزم ایک پیشہ ہے لیکن جرنلسٹ میں خدمت کا جذبہ ہونا ضروری ہے تبھی سماج کی سچائی سامنے آسکتی ہے ۔ ایک فوٹو جرنلسٹ میں مہاپرشوں کے اوصاف ہونا چائیے تبھی وہ کامیاب جرنلسٹ ہوسکتا ہے ۔ فوٹو جنرنلزم کی بنیاد یہ ہے کہ صرف ایک تصویر سے ہزار وںخبرحاصل ہوجاتی ہے ۔ موجود وقت میں جس طرح میڈیا سرگرم ہے اسے دیکھ کر ایسا لگتا ہے کہ یہ ملک کا پہلا ستون ہوگیا ہے جو عوام کے حق میں کام کررہا ہے ۔ اس موقع پر صحافی ششی موہن بھاردواج نے فوٹو جرنلزم کی باریکی بتاتے ہوئے کہا کہ اب کیمرے کا رول بڑھ گیا ہے ۔ موبائل کے ذریعہ ہی زیادہ تر کام ہوجاتے ہیں ۔ اس موقع پر ڈاکٹر چندر بھانو پرتاپ سنگھ نے بھی خطاب کیا ۔ پروگرام میں تحقیقی مقالہ جوالہ چودھری نے پیش کیا ۔ کلما ت تشکر فاؤنڈیشن کے سکریٹری مکیش کمار جھا نے پیش کیا ۔ سمینار میں پروفیسر آنند پرکاش گپتا ، امیش کمار ورما ، ریچا مشرا ، شنکر کمار ، ہری اوم کمار ، نہا کماری ، سروجنی گوتم ، خوشبو کماری ، شالنی کماری ، راجن کارتکیہ انیل کمار سنگھ وغیرہ موجود تھے ۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close