بہار

لوک سبھا الیکشن لڑیں گے جے این یوطلبہ یونین کے سابق صدرکنہیا کمار

جے این یو طلبہ یونین کے سابق صدر کنہیا کمار 2019 کے لوک سبھا الیکشن میں بہار کے بیگو سرائے سے میدان میں اتریں گے۔ ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق کنہیا کمار بیگو سرائے سے عظیم اتحاد کے امیدواربنیں گے۔بہار میں عظیم اتحاد میں راشٹریہ جنتا دل (آرجے ڈی) سمیت کانگریس، نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی)، ہندوستانی عوام مورچہ سیکولر(ہم)، شرد یادوکی ایل جے ڈی کے علاوہ لیفٹیننٹ پارٹیاں بھی شامل ہیں۔ کنہیاں حال کے دنوں میں بہارکی سیاست میں بھی غیرمتوقع طور پرسرگرم ہیں۔جیل سے رہا ہونے کے بعد پٹنہ دورہ پرآئے کنہیا کمار تب وزیراعلیٰ نتیش کمار اور آرجے ڈی سربراہ لالو پرساد یادو دونوں سے ملے تھے۔ اس وقت لالو پرساد کو پیرچھوکرآشیرواد لینے پرمخالفین نے جم کر تنقید کی تھی۔ذرائع کے مطابق لالو پرساد یادواوران کے بیٹے تیجسوی پرساد یادو کنہیا کمارکو ٹکٹ دینے کے لئے راضی ہیں اورکانگریس کے ساتھ بات چیت کے بعد بیگو سرائے سیٹ سے کنہیا کمارکوموقع دیا جارہا ہے۔آرجے ڈی سے منسلک ذرائع نے ایسے اشارے دیئے ہیں کہ کنہیا کمار سی پی ایم کے باضابطہ طورپرامیدوارکے طورپرالیکشن لڑیں گے، لیکن انہیں عظیم اتحاد کا عام امیدوار اعلان کیا جائے گا۔ جے این یو میں ہوئے معاملے سے سرخیوں میں آئے کنہیا کماربنیادی طورپربیگو سرائے ضلع کے برونی بلاک میں بیہٹ پنچایت کے رہنے والے ہیں۔ان کی ماں مینا دیوی ایک آنگن باڑی خادمہ ہیں اوران کے والد جے شنکر سنگھ یہیں ایک کسان تھے۔ بیگو سرائے لوک سبھا سیٹ پر ابھی بی جے پی کے بھولا سنگھ ممبرپارلیمنٹ ہیں، جن کا 2019 کا الیکشن نہ لڑنا طے مانا جارہا ہے۔ یہاں گزشتہ الیکشن میں بی جے پی کے بھولا سنگھ نے آرجے ڈی کے امیدوار تنویر حسن کو شکست دی تھی۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close