بہارمگدھ

مصنوعات محکمہ کے خلاف سنگین الزام، مکھیاکے بھتیجے کوماری گولی

بتیا:بہار میں شراب بندی سے جڑی ایک بے حد چوکانے والی خبر آرہی ہے۔دراصل بتیا ضلع اہل صبح ایک نوجوان شخص کو گولی مار کر قتل کر دی گئی۔ اس قتل کے بابت مقامی لوگوں کا الزام ہے کہ شراب اسمگلنگ کے شبہ میں مصنوعات محکمہ کی ٹیم نے مکھیا پنکج برنوال کے بھتیجے سنی پر گولی چلائی جس سے اس کی موت ہو گئی ہے۔ملی معلومات کے مطابق ضلع کے ساٹھی تھانہ کے بسنت پور گاؤں کے موڑ پر مکھیا پنکج برنوال کے بھتیجے سنی کی گولی لگنے سے موت ہو گئی ہے۔ گولی مار دیئے کا الزامات مصنوعات محکمہ کی ٹیم پرلگا ہے۔ سنی کے خاندان والے کا کہنا ہے کہ سنی کومصنوعات محکمہ ٹیم نے گولی مار دی ہے۔ مقامی لوگ کہتے ہیں کہ مصنوعات محکمہ کی ٹیم گاؤں میں شراب کی اطلاع پرگاؤں چھاپہ ماری کرنے گئی تھی۔ اس وقت کے دوران سنی مصنوعات محکمہ میں ٹیم کے گولیوں کا نشانہ بن گیا۔اس قتل کے بعد مقامی لوگوں نے مظاہرہ کرنا شروع کردیا۔ ناراض گاؤں والوں نے نرکٹیا گنج بتیا روڈ کو جام کردیا۔ لوگوں کے پرزور مظاہرہ کو دیکھتے ہوئے اےس ڈی پی او نرکٹیا گنج، محمد نصار، تھانہ انچارج ساٹھی اودھیش جھا سمیت بھاری تعداد میں پولیس فورس موقع پر پہنچ کر حالات کو کنٹرول کرنے کی کوشش میں لگ گئی۔ادھر واقعہ کے بابت گاؤں والوں نے بتایا کہ سنی گاؤں میں کرانا دکان چلاتا تھا۔ بدھ کی صبح قریب ساڑھے بجے سامان لینے بتیا جا رہا تھا۔ اسی دوران بست پور موڑ کے پاس پہلے سے موجود مصنوعات محکمہ کی ٹیم نے سنی کو روکنا چاہا لیکن سنی نہیں رکا۔ جب سنی رکا نہیں ہوئی تو مصنوعات محکمہ کی ٹیم نے فائرنگ کردی۔ مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ گولی لگنے سے سنی کی موت ہو گئی۔اسی طرح ناراض گاؤں نے سڑک پر مقتول کی لاش سڑک پر رکھ مظاہرہ کرتے ہوئے سڑک جام کردیا۔ اس واقعہ کے بعد مصنوعات محکمہ کے کسی کا کوئی بیان نہیں آیا ہے۔ جبکہ پولیس معاملے کے پرامن حل تلاش کرنے کی کوشش میں ہے۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ بتیا جینت کانت نے بتایا کہ پولیس کو اس معاملے کی باریکی سے تحقیقات کا حکم دے دیا گیا ہے۔ تحقیقات کے بعد قصورواروں کے خلاف کارروائی طے ہے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close