پٹنہ

نتیش کی ایودھیا معاملے پر خاموشی ایک تیر سے دو نشانہ: مانجھی

پٹنہ:ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کو لے کر آرڈیننس لانے کی بحث کے درمیان ہم کے قومی صدر اور بہار کے سابق وزیر اعلی جیتن رام مانجھی نے ایودھیا رام مندر کی تعمیر کے معاملے پر وزیر اعلی نتیش کمار کی خاموشی پر ایک بڑا سوال اٹھاتےہوئے کہا کہ ان کی خاموشی سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ بی جے پی کی طرف سے ایودھیا رام مندر کی تعمیر کا وہ کہیں نہ کہیں حمایت کرتی ہے؟
سابق وزیر اعلی جیتن رام مانجھی نے نتیش کمار سے سوال پوچھا ہے کہ کیا وہ رام مندر کی تعمیر کو لے کر مرکزی حکومت کی طرف سے آرڈیننس لانے کے حق میں ہیں؟
سابق وزیر اعلی جیتن رام مانجھی نے کہا کہ رام مندر کے نام پر بی جے پی ملک کو جلانے کی سازش رچ رہی ہے اور وزیر اعلی نتیش کمار خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں۔مسٹر مانجھی نے کہا کہ بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار اپنی کرسی بچانے کے لئے کب تک خاموش رہیں گے۔مسٹر مانجھی نے کہا کہ آج پورے ملک میں ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کو لے کر ایک بڑی بحث چھڑی ہوئی ہے اس کے باوجود بہار کے وزیر اعلی مسٹر نتیش کمار کی خاموشی سے اقلیتی سماج کو بھی ان پر شک ہونے لگا ہے |۔ انہیں یہ لگنے لگا ہے کہ وزیر اعلی نتیش کمار کو صرف اپنی کرسی سےہی محبت ہے۔ اقلیتی مفادات سے انہیں کوئی لینا دینا نہیں ،نہیں تو وہ اس معاملے پر کھل کر سامنے کیوں نہیں آتے کہ وہ کیا چاہتے ہیں۔ | انہوں نے کہا کہ بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار ایک تیر سے دو نشانہ لگانے کے پھیر میں مصروف ہیں ان کی منشا سے یہ واضح ہوتا ہے کہ وہ قومی مفاد سے زیادہ اپنے مفادکو دیکھ دے رہے ہیں، انہیں اقلیتی مفادات کے ساتھ ساتھ قومی مفاد سے کوئی لینا دینا نہیں۔ |
سابق وزیر اعلیجیتن رام مانجھی نے نتیش پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ نتیش جی کرسی آئے گی جائے گی پر تاریخ کو اس کام کے لئے ہمیشہ سیاہ باب کے طور پر یاد رکھے گا۔مانجھی نے کہا کہ مندر مسجد کا معاملہ کورٹ میں زیر التوا ہے۔ ایسی صورت میں عدالت پر کسی طرح کا دباؤ بنانا ملک کے آئین کے لیے خطرہ هہے۔عدالت سے فیصلہ جن کے حق میں آتا ہے اس فریق کو ہی وہاں کچھ بنانے کا حق ہوگا، کورٹ کے فیصلے کے درمیان اس معاملے کو لے کر کسی طرح کا تبصرہ کرنا آئین کے اوپر انگلی اٹھانے کے برابر ہے۔
جیتن رام مانجھی نے مندر معاملے پر بی جے پی کی حکمت عملی پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ آج ملک کے نوجوان روزگار چاہتے ہیں | ملک اور ریاست میں دلت ہراساں میں چوگنا اضافہ ہوا ہے | ان تمام سنگین مسائل سے لوگوں کی توجہ بھٹکانے کے لئے اب مندر مسئلے کو طول دیا جا رہا ہے | جس سے سماج میں تناؤپھیلے گا۔ | صحیح معنوں میں اگر ملک کی ترقی بھارتیہ جنتا پارٹی اور نریندر مودی چاہتے ہیں تو ایسی صورت میں ترقی کی سیاست کریں نہ کہ مندر کی ۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close