بہارپٹنہسیاست

نوٹ بندی کے سبب لاکھوں نوجوان بیروزگار ہوگئے:مدن موہن جھا

کانگریس کا دھرنا، مرکزی حکومت سے کئی سوال

پٹنہ:نوٹ بندی کے دو برس مکمل ہونے پر سبھی ضلع کانگریس پارٹی کے ذریعہ ہیڈ کوارٹر پر آج صبح11بجے سے 2بجے تک مظاہرہ کیا گیا۔ ریاستی کانگریس کمیٹی کے میڈیا انچارج ایچ کے ورما نے بتایا کہ پٹنہ مہانگر کانگریس کمیٹی اور پٹنہ دیہی ضلع کانگریس کمیٹی -1اور پٹنہ ضلع دیہی ضلع کانگریس کمیٹی -2کے مشترکہ زیر اہتمام آج کنکر باغ ٹیمپو اسٹینڈ میں ہزاروں کی تعداد میں موجود کانگریس ورکروں نے صبح 11بجےس ے دوپہر2بجے تک دھرنا دیا۔
اس موقع پر دھرنا سے خطاب کرتے ہوئے ریاستی کانگریس کمیٹی کے صدر ڈاکٹر مدن موہن جھا نے کہا کہ آج نوٹ بندی کے دو برس مکمل ہونے پر مرکزی حکومت کو ملک کے عوام کو بتاناچاہئے کہ ملک میں نوٹ بندی سے کتنے لوگ مستفیض ہوئے ہیں؟ کتنے کالے دھن کا انکشاف ہوا؟
ڈاکٹر جھا نے مزید کہا کہ بین الاقوامی سطح پر خام تیل کی قیمتوں میں کمی آنے کے باوجود پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے ؟ انہوں نے کہا کہ نوٹ بندی کے سبب ملک میں 130لوگوں کی موت ہوچکی ہے ، لاکھوں چھوٹے اور اوسط درجے کی صنعتیں بند ہوگئیں جس کے نتیجے میں لاکھوںنوجوان بیروزگار ہوگئے۔
ڈاکٹر جھا نے کہا کہ مرکزی حکومت کی غلط پالیسیوں کے سبب مہنگائی سب سے اونچی سطح پر پہنچ گئی ہے۔ ڈالر کے مقابلے میں روپے میں مسلسل گراوٹ ہورہی ہے۔ بیروزگارنوجوانوں کی تعداد میں بھی مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔
ڈاکٹر جھا نے کہا کہ افراط زر مسلسل بڑھ رہی ہے اور مرکزی حکومت اس معاملے میں خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے۔ ڈاکٹر جھا نے کہ اکہ ملک کے عوام نے وزیر اعظم نریندر مودی کو ہٹانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ابھی چند روز قبل ہی کرناٹک لوک سبھا کی تین اور اسمبلی کی دو سیٹوں کےلئے ہوئے ضمنی انتخابات میں جہاں کانگریس اور جے ڈی ایس اتحاد کو چار سیٹوں پر فتح حاصل ہوئی ہے اور کچھ مہینے قبل مہاراشٹر، اتر پردیش، راجستھان ، مدھیہ پردیش اور دیگر ریاستوں کے لوک سبھا اور اسمبلی کے ضمنی انتخابات میں 80فیصد سیٹوں پر بی جے پی مخالف جماعتوں کی جیت ہوئی تھی۔ ان نتائج سے ملک کے عوام کی ذہنیت کا اندازہ لگایا جاسکتا ہے۔
دھرنا سے خطاب کرتے ہوئےسابق گورنر نکھل کمار نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی غلط اقتصادی پالیسیوں کے سبب آج ملک کے عوام پریشان ہیں۔ آل انڈیا کانگریس کمیٹی کے سکریٹری اور سابق وزیر ڈاکٹر جاوید نے کہا کہ بی جے پی حکومت نے ایک سوچی سمجھی سازش کے تحت نوٹ بندی نافذ کی اور اس سے بڑے صنعتی گھرانوں کو فائدہ پہنچا۔
ریاستی کانگریس کمیٹی کے سابق صدر انل کمار شرما نے کہا کہ وزیر اعظم 2014کے لوک سبھا انتخابات کے وقت کئے گئے وعدے کو بھول چکے ہیں اور انتخاب کے نزدیک آتے ہی رام مندر کا راگ الاپنے لگتے ہیں۔
اس موقع پر ریاستی کانگریس کمیٹی کے کارگزار صدر ڈاکٹر سمیر کمارسنگھ، ایم ایل اے پریم چندر مشرا، بنٹی چودھری، امت کمارٹنا، مدن موہن تیواری، سابق ایم ایل اے جناردھن شرما، ریاستی کانگریس کمیٹی کے نائب صدر پروفیسر وینا کرن، مسز پرتیما داس، یوتھ کانگریس کے نائب صد رگنجن پٹیل کے علاوہ درجنوں رہنمائوں نے اپنے اپنے خیالات رکھے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close