بہارپٹنہ

وزیر اعلیٰ نے 352ویں پرکاش پرو کی تیاریوں کا جائزہ لیا

پٹنہ:وزیر اعلیٰ جناب نتیش کمار نے آج گروگوبند سنگھ جی مہاراج کے 352 پرکاش پرو کی تیاریوں کے جائزہ کے دوران کنگن گھاٹ واقع ٹینٹ سٹی کا معائنہ کیا ۔ معائنہ کے دوران وزیر اعلیٰ نے زمین کو ہموار کر نے کو کہا تاکہ عقیدت مندوں کو کسی طرح کی کوئی دشواری نہ ہو ۔ صاف صفائی ، اجابت خانہ، ایمبولینس کا انتظام ، وینٹیلیشن کا انتظام ، مچھروں سے بچائو کے لیے نیٹ اور روشنی کا مکمل انتظام قائم رکھنے کی ہدایت دی ۔ ساتھ ہی یہ بھی ہدایت دی کہ ٹینٹ میں عقیدت مندوں کے ٹھہر نے کے لیے بیڈ کا مناسب انتظام کے ساتھ لنگر میں کھانے پینے کا انتظام بہتر ہو ۔گنگن گھاٹ ٹینٹ سٹی کے جائزہ کے بعد وزیر اعلیٰ نے تخت شری ہر مندر جی صاحب گرودوارہ کے گیسٹ ہائوں کا بھی معائنہ کیا۔وزیر اعلیٰ نے گسٹ ہائوں کی طرف آنے والے راستے کو بھی ٹھیک کر نے کی ہدایت دی ۔ بغل کے تالاب کی گھیرا بندی بہتر ڈھنگ سے ہو تاکہ دیکھنے میں اچھالگے اور قرب و جوار کے راستے سے آنے جانے والے عقیدت مندوں کو کسی طرح کی کوئی دشواری نہ ہو ، معائنہ کے بعد تخت سری ہرمندر جی گرودوارہ میں جاکر انہوں نے عقیدت کا اظہار کیا ۔ اس موقع پر انتظامیہ کمیٹی کے ذریعہ وزیر اعلیٰ کا خیر مقدم سروپا سونپ کر کیا کیا ۔ وزیر اعلیٰ نے گرودوارہ احاطہ کا بھی معائنہ کیا ۔
اس دوران سیاحت کے وزیر جناب پرمود کمار ، پٹنہ میونسپل کارپوریشن کی میئر محترمہ سیتا ساہو ، وزیر اعلیٰ کے صلاح کار جناب انجنی کمار ، چیف سیکریٹر ی جناب دیپک کمار ، وزیر اعلیٰ کے پرنسپل سیکریٹری جناب چنچل کمال ، بجلی محکمہ کے پرنسپل سیکریٹری جناب پرتیہ امرت ، سیاحت محکمہ کے پرنسپل سیکریٹری جناب روی منوبھائی پر مار ، وزیر اعلیٰ کے سیکریٹری جناب منیش کمار ورما ، وزیر اعلیٰ کے سیکریٹری جناب انوپم کمار ، سیاحت محکمہ کی ڈائریکٹر محترمہ عنایت خان ، پٹنہ میونسپل کارپوریشن کے کمشنر جناب انوپم کمار سومن ، وزیر اعلیٰ کے او ایس ڈی جناب گوپال سنگھ ، پٹنہ کے ڈی ایم جناب کمار روی ، ایس ایس پی ، سارن ایس پی سمیت دیگر افسران موجود تھے ۔
میڈیا اہلکاروں کے سوالوں کا جواب دیتے ہوئے وزیر اعلیٰ نے کہا کہ گروگوبند سنگھ جی مہاراج کی یہ پیدائش کی سرزمین ہے یہ ہم سب کے لیے فخر کی بات ہے ۔ جب 350 واں پرکاش پرو کا انعقاد ہو اتھا تب ریاستی حکومت اور پٹنہ صاحب سمیت پورے بہار کے لوگوں نے عقیدت مندوں کی ہر طرح سے مدد کی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ 350ویں پرکاش پرمیں لاکھوں کی تعداد میں پورے ملک سے ہی نہیں بلکہ ملک سے باہر سے بھی سکھ سماج کے لوگ یہاں تشریف آئے تھے ۔ اس کے بعد سال 2017 میں 251ویں پرکاش پر کو شکرانہ تقریب کی شکل میں منا یا کیا اور اس تقریب کا 2017 کے دسمبر میں ہی اختتام ہوا تھا ۔ یہاں آئے ہوئے تمام عقیدت مندوں کا ریاست کے لوگوں نے تہہ دل سے خیر مقدم کیاتھا۔انہوں نے کہا کہ امسال 352واں پرکاش پرو ہے اور اس میں بھی جس طرح سے یہاں گرودوارہ میں عقیدت مندوں کے آنے کی تعداد بڑھ رہی ہے ۔ ان حالات میں ہم تمام لوگوں کا یہ فریضہ ہے کہ سرکار ،انتظامیہ کے ساتھ تمام لوگ ساتھ مل کرتعاون کریں
۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ 350ویں پرکاش پرو کے بعد یہاں آنے والے عقیدت مندوں کی تعداد بڑھنے لگی ہے ، تاہم اتنی تعداد نہیں ہو سکتی ہے جتنا 350ویں پرکاش پرو میں تھی۔اس لیے ہم لوگوں نے حکومت کی طرف سے ٹینٹ سٹی کی تعمیر کرائی ہے ۔ ماضی میں ہم لوگوں نے یہاں اور بائی پاس کے بغل میں سڑک کے کنارے ٹنٹ سٹی بنوائی تھی ، لیکن اس بار اس کی ضرورت نہیں ہے ۔پھر بھی عقیدت مندوں کی آمد کو دیکھتے ہوئے 5000صلاحیت والے ٹینٹ سٹی کی بنائی گئی ہے ۔لنگر کا بھی ضرورت کے مطابق انتظام کیاگیا ہے ، اس کے علاوہ علاج معالجہ کا بھی پختہ انتظام کیاگیا ہے۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ جب 350واں پرکاش پرو منا یا جارہا تھا تو اسی وقت ہم لوگوں نے یہ فیصلہ کیاتھا کہ کنگن گھاٹ کے پاس سیاحت محکمہ کا جوسنٹر بنا ہے ، اس بار اس کو بھی گرودوارہ کے حوالے کیاجائے گا ، تاکہ اس کا بھی استعمال ہو سکے ۔اس کے بعد اس سینٹر پر سیاحت سے متعلق جو باتیں ہوں گی اس کی نمائش لگے گی ، جس کو دیکھ کر سیاحتی مقام کے تئیٔں بیدار ہوں گے ۔ انہوں نے کہاکہ جتنے بھی عقیدت مند یہاں آئیں گے انہیں کسی بھی طرح کی دقت نہ ہو اس کے لیے گرودوارہ اور کئی اسکولوں میں بھی انتظام کیا گیا ہے ۔ عقیدت مندوں کی سیکورٹی ، صحت اور صاف صفائی سمیت ہر سہولت کو ذہن میں رکھتے ہوئے پختہ انتظام کیے گئے ہیں ۔
وزیر اعلیٰ نے کہا کہ 350ویں پرکاش پرو کے دوران آنے کا راستہ ، خستہ تار سمیت تمام چیزوں کو ریاستی حکومت کے ذریعہ درست کرا یا گیا تھا ۔ ہم لوگ ہر وقت اس بات کو لے کر ہوشیار رہتے ہیں کہ اب بڑی تعداد میں عقیدت مند یہاں آنے والے ہیں انہیں کسی طرح کی تکلیف نہیں ہو ، یہاں آکر وہ خوشی محسوس کریں ۔ وزیر اعلیٰ نے میڈیا اہلکاروں سے یہ بھی کہا کہ آئندہ بھی اسی طرح سے سکھ عقیدت مندوں کو ریاستی حکومت تعاون کر تی رہے گی ۔ انہوں نے کہا کہ گرونانک دیوجی مہاراج کا بھی 350واں سالانہ اتسو ہو نے والا ہے ہم لوگوں نے تو ان کے اس اتسوکے موقع پر سرکاری طور پر عام تعطیل کا بھی فیصلہ کیا ہے ۔ راجگیر میں گرونانک دیوجی مہاراج آئے تھے اور وہاں رکے بھی تھے ۔ انہوں نے کہا کہ راجگیر میں تمام کنڈ کا پانی گرم ہے ،لیکن جہاں گرونانک دیوجی رکے تھے اس کنڈ کا پانی ٹھنڈا ہے ،اس لیے اس کنڈ کو بھی ٹھیک کرایا گیا ہے ۔ اس کے علاوہ وہاں پر 11 جنوری سے ایک گرودوارہ کی تعمیر کا کام شروع ہو نے والا ہے ، ہم اس میں بھی جائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ چانکیہ نے یہیں اقتصادیات بنائی ،گیانی آریہ بھٹ بھی ہوئے ، مہاتما بودھ کی گیان کی زمین ، بھگوان مہاویر کی پیدائش کی زمین ، علم کی زمین ، ہے ۔ یہ ہم سب کے لیے فخر کی بات ہے ۔ اسی طرح سے گروگوبند سنگھ جی کی پیدائش بھی یہیں ہوئی اور پیدائش کے کئی سال بعد تک وہ یہیں رہے ۔ اس لئے ان سے متعلق کوئی بھی پروگرام ہو گا تو یہ ہم تمام لوگوں کا فریضہ ہے کہ ہم اس میں پورا تعاون کریں ۔ اس کے لیے کسی کو کہنے کی ضرورت نہیں ہے ۔ ہم لوگ ہر طرح سے خود اسے اپنی ذمہ داری مانتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہم لوگوں نے یہ بھی طے کر لیا ہے کہ پرکاش پنج کی تعمیر ہو گی جس میں گرونانک دیو جی مہاراج اور سکھ سماج سے متعلق اہم جانکاری اس میں ہو گی ۔ اس کی تعمیر کا کام شروع ہو گیا ہے ۔ آخر میں وزیر اعلیٰ نے اس موقع پر تمام لوگوں کے تئیں نیک تمنائوں کا اظہار کیا ۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close