متھلانچل

ٹریپل مڈر کیس کے کلیدی ملزم لال بہادری یادو نے کیا سرینڈر

دربھنگہ :دربھنگہ دہلی مور بس اسٹینڈ پرہوئے مشہور تین نفری قتل معاملے کے کلیدی ملزم نے پولیس کے سامنے اس وقت سرینڈر کردیا جبکہ پولیس اس کے گھر قرق ضبط کرنے پہنچی چکی تھی ۔ پولیس نے جمعہ کو کلیدی ملزم کے گھرکی قرق ضبط کرنے رانی پور واقع اس کے گھر پہنچی۔ تبھی اس نے خود کو پولیس کے حوالہ کردیا اس کے بعد قرق کی کاروائی روک دی گئی ۔ بڑی تعداد میں پولیس اہلکار لگائے گئے تھے اور فساد کنٹرول گاڑی بھی بھیجی گئی تھی ۔ اسی سال 13؍مارچ کو دربھنگہ نو تعمیر بس اسٹینڈ پر واردات ہوئی تھی ۔ زمین کیلئے زور آزمائی میں دن دہاڑے گولی باری ہوئی تھی جس میں تین افراد سنجے یادو ، راجو اور شعیب کی موت ہوگئی تھی ۔ موقع سے اسلحہ ، زندہ کارتوس برآمد کی گئی تھی ۔ پولیس نے اس ورادت میں چھ لوگوں کو گرفتار کرلیا تھا اور کلیدی ملزم لال بہادر یادو فرار ہوگیا تھا ۔ لال بہاری پنچایت سمیتی رکن بھی ہے ۔ پولیس نے اس کے گھر پر اشتہار چسپاں کیا تھا ۔ اس کے بعد بھی حاضر نہیں ہونے پر قرق ضبط کرنے کی کاروائی کی گئی ہے ۔ صدر تھانہ انچارج راجن کمار نے بتایا کہ 13؍مارچ کو دہلی مو ڑ پر پیش آئے واردات میں لال بہاری یادو کے خلاف کئی شواہد ملے تھے ۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close