سیاست

ٹکٹ نہ ملے تو ایس پی کے دروازے کھلے ہیں:اکھلیش

بھوپال:ریاست میں اسمبلی انتخابات کو لے کر سیاسی سرگرمیاں تیز ہوگئی ہیں۔ سیاسی پارٹیاں زور شور سے انتخابی مہم میں مصروف ہیں۔ ایسے میں سماجوادی پارٹی کے قومی صدر اکھلیش یادو نے پیر کو اپنے کھجراہو دورہ پر یہ کہہ کر کانگریس کی مشکلیں بڑھا دی ہیں کہ اگر کانگریس لیڈروں کو ان کی پارٹی سے ٹکٹ نہیں ملے تو وہ ایس پی میں شامل ہوجائیں۔ بتادیں کہ آنے والے اسمبلی انتخابات میں پارٹی کے انتخابی مہم کے تحت پیر کی صبح ایس پی صدر اکھلیش یادو کھجراہو پہنچے۔ یہاں انہوں نے پریس کانفرنس کو خطاب کیا۔ انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سماجوادی پارٹی ریاست میں چوتھے نمبر کی بڑی پارٹی ہے اور ہماری پارٹی ابھی اکیلے انتخابی میدان میں اتر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کچھ وقت قبل کانگریس سے اتحاد کو لے کر بات چیت چل رہی تھی لیکن آپسی رضامندی نہیں بن پائی، اس لیے اب کانگریس سے اتحاد نہیں ہوگا۔ سماجوادی پارٹی نے دودن پہلے ہی امیدواروں کی پہلی فہرست جاری کی ہے، جس میں انہوں نے چھ اسمبلی سیٹوں کے امیدواروں کے ناموں کا اعلان کیا تھا۔ پارٹی اپنے اثروالے زیادہ سے زیادہ حلقوں میں اپنے امیدوار اتارے گی۔ انہوں نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس لیڈر چاہیں تو ایس پی میں شامل ہوسکتے ہیں۔ کانگریس سے اگر انہیں ٹکٹ نہیں ملتا ہے تو ان کے لیے ایس پی کے دروازے کھلے ہیں۔ اپنے حلقوں میں اچھے رسوخ رکھنے والے لیڈروں کو کانگریس اگر ٹکٹ سے محروم رکھتی ہے تو وہ سماجوادی پارٹی میں آسکتے ہیں۔ اس دوران انہوں نے نعرہ دیتے ہوئے یہ بھی کہا کہ ہاتھ کا ساتھ چھوڑو، سائیکل کی سواری کرو۔ اکھلیش یادو کے کانگریس لیڈروں کو اس کھلی دعوت سے کانگریس کی تشویش بڑھ گئی ہے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close