کھیل

پجارا کی سنچری،ہندوستان 250پر 9

ایڈیلیڈ،:مسٹر بروسہ مند چتیشور پجارا (123) رن کی پر جدو جہد سنچری کی بدولت ہندستان نے آسٹریلیا کے خلاف یہاں ایڈیلیڈ اوول میں پہلے کرکٹ ٹسٹ کے پہلے دن جمعرات کو خراب آغاز سے نجات حاصل کرتے ہوئے اسٹمپس تک نو وکٹ پر 250 رن بنا لئے ہیں ۔
پجارا نے اپنے ٹیسٹ کیریئر کی 16 ویں سنچری بنائی اور 65 ویں ٹیسٹ میں اپنے 5000 رنز بھی پورے کر لیے۔ پجارا نے ایک اینڈ سنبھالكر بلے بازی کرتے ہوئے 246 گیندوں پر ناٹ آوٹ 123 رن میں سات چوکے اور دو چھکے لگائے۔ پجارا نویں بلے باز کے طور پر دن کے 88 ویں اوور کی پانچویں گیند پر رن آؤٹ ہوئے اور اس کے ساتھ ہی دن کا کھیل ختم ہو گیا۔
آسٹریلیا میں تاریخ رقم کرنے کی مضبوط دعویدار مانی جا رہی دنیا کی نمبر ایک ٹیسٹ ٹیم کی پہلے ٹیسٹ کے پہلے ہی دن کارکردگی مایوس کن رہی۔ محض 86 رنز پر آدھی ٹیم گنوانے کے بعد سرکردہ بلے باز پجارا کی سنچری سے ہندوستان نے اپنا احترام بچایا۔ا سٹمپس کے وقت محمد سمیع چھ رن بنا کر کریز پر تھے جبکہ آخری بلے باز جسپريت بمراه دوسرے دن میدان پر اتریں گے۔
ہندستان کے اسٹار بلے بازوں کی کارکردگی مایوس کن رہی اور ٹیم کے سب سے بڑے اسٹار بلے باز کپتان وراٹ کوہلی تین رن بنا کر آؤٹ ہو گئے۔ لوکیش راہل دو، مرلی وجے 11، اجنکیا رہانے 13، ٹیم میں واپسی کرنے والے روہت شرما 37، رشبھ پنت 25 اور روی چندرن اشون 25 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔میزبان ٹیم نے گھریلو میدان پر بہترین گیند بازی کی اور مسلسل وقفے پر ہندستانی ٹیم کے وکٹ اكھاڑے۔ مشیل اسٹارک، جوش ہیزل وڈ اور پیٹ کمنز کی تیز گیند بازی نے توقع کے مطابق کھیل دکھاتے ہوئے دو دو وکٹ نکالے جبکہ آف اسپنر ناتھن لیون کو بھی دو وکٹ ملے۔
ایک سرے پر ٹک کر رنز کے لیے جدوجہد کر رہے پجارا نے تقریبا پورے دن بلے بازی کی اور 246 گیندوں میں سات چوکے اور دو چھکے لگا کر 123 رنز کی سنچری بنائی۔ کمنز نے انہیں رن آؤٹ کر نویں اور دن کے آخری بلے باز کے طور پر رن آؤٹ کرایا۔ پجارا نے اپنی 16 ویں ٹیسٹ سنچری کی بدولت ہندستان کو کچھ قابل احترام پوزیشن میں پہنچایا۔پجارا نے ٹیم کے آٹھ بلے بازوں کے ساتھ مفید شراکت کیں۔ انہوں نے روی چندرن اشون (25) کے ساتھ ساتویں وکٹ کے لیے اننگز میں 62 رنز کی واحد نصف سنچری شراکت کی۔ اوپننگ آرڈر کے مایوس کن کارکردگی کے بعد نچلے آرڈر کے کھلاڑیوں نے بورڈ پر رن جوڑے۔ روہت شرما نے 37 رن اور رشبھ پنت نے 25 رن بنائے۔
آل راؤنڈر اشون نے اپنی 76 گیندوں کی اننگز میں ایک چوکا لگایا۔ وہ پجارا کے بعد دیر تک ٹکنے کا جذبہ دکھانے والے دوسرے بلے باز رہے۔ پہلے دن ہندستان کی اننگز میں دوسرا بڑا اسکور روہت شرما کا رہا جنہوں نے 37 رن بنائے۔ اگرچہ روہت نے بہت آسانی سے اپنا وکٹ گنوایا اور بڑی اننگز نہیں کھیل سکے۔اس سے پہلے ایڈیلیڈ اوول میں ہندستانی کپتان وراٹ کوہلی کا ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ آغاز سے ہی غلط ثابت ہوا اور مہمان ٹیم نے چائے کے وقفہ تک 143 رن جوڑ کر اپنے چھ اہم وکٹ گنوا دیئے جبکہ لنچ تک اس کا اسکور محض 56 رن پر چار وکٹ تھا۔اوپنر لوکیش راہل اور مرلی وجے کی اوپننگ جوڑی سستے میں پویلین لوٹ گئی جس سے ٹیم اچھی شروعات حاصل نہیں کر سکی۔ آسٹریلوی فاسٹ بولر جوش ہیزل وڈ نے راہل کو آرون فنچ کے ہاتھوں کیچ کرایا جو محض دو رنز بنا پائے جبکہ ٹیسٹ ماہر بلے باز مرلی 22 گیندوں میں 11 رنز بنا کر مچل اسٹارک کا شکار بن گئے۔
ہندستانی اوپننگ جوڑی کے سستے میں پویلین لوٹنے کے بعد نمبر ایک ٹیسٹ بلے باز وراٹ بھی مایوس کر گئے۔ وہ پیٹ کمنز کی گیند پر آؤٹ ہوئے جب گلی میں عثمان خواجہ نے بائیں طرف ڈائیو لگاتے ہوئے گیند کو لپک کر آسٹریلیا کے لیے سب سے اہم وکٹ نکالا۔ وراٹ 16 گیندوں میں تین رن ہی بنا سکے۔ہندستانی اننگز میں وکٹ مسلسل گرتے رہے اور نائب کپتان اجنکیا رہانے 13 رنز پر ہیزل وڈ کی گیند پر پیٹر هیڈ اسكوب کو کیچ دے بیٹھے۔ روہت شرما نے اگرچہ پجارا کے ساتھ مل کر کچھ پر جدوجہد اننگز کھیلی۔ تقریبا 12 ماہ بعد ٹیسٹ ٹیم میں واپسی کر رہے روہت نے 61 گیندوں میں دو چوکے اور تین چھکے لگا کر 37 رن بنائے۔ کمنز کی گیند پر کور میں روہت کا چھکا بہترین رہا لیکن وہ اس اننگز کو دیر تک جاری نہیں رکھ سکے اور آف اسپنر ناتھن لیون کی گیند پر ریان ہیرس کو آسان کیچ دے کر پویلین لوٹ گئے۔
روہت اور پجارا نے پانچویں وکٹ کے لئے 45 رن جوڑے۔ ہندستان نے اپنا چھٹا وکٹ رشبھ پنت کے طور پر گنوایا جنہوں 25 رن بنائے اور چھٹے وکٹ کے لئے پجارا کے ساتھ 41 رن جوڑے۔ پنت نے 38 گیندوں کی اننگز میں دو چوکے اور ایک چھکا لگایا۔ اشون نے پجارا کے بعد میدان پر سب سے زیادہ گیندیں کھیلیں لیکن وہ کمنز کی گیند پر هیڈاسكوب کو کیچ دے کر ساتویں بلے باز کے طور پر آؤٹ ہوئے۔ اس شراکت داری کے ٹوٹنے کے بعد ایشانت شرما میدان پر آئے لیکن وہ 20 گیندوں میں ایک چوکے کی مدد سے محض 4 رنز ہی بنا سکے۔اسٹارک نے ایشانت کو بولڈ کر 83 ویں اوور میں ہندستان کا آٹھواں وکٹ نکال دیا۔ اس کے بعد پجارا کا صبر بھی جواب دے گیا اور وہ نویں بلے باز کے طور پر دن کے آخری بلے باز کے طور پر 123 رنز کی پر جدوجہد اننگز کھیل کر آؤٹ ہو گئے۔ پجارا کو کمنز نے رن آؤٹ کیا۔ سمیع نو گیندوں میں ایک چوکا لگا کر 06 رن پر ناٹ آؤٹ ہیں۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close