بہارمتھلانچل

پلاسٹک کے تھیلوں پر ۱۴؍ دسمبر سے لگے گی مکمل روک :ڈی ایم

دربھنگہ :۱۴؍ دسمبر 2018سے پلاسٹک تھیلی کے استعمال ، ذخیرہ اندوزی اور خرید و فروخت پر پوری طرح سے پابند لگ جائے گی ۔ ضلع مجسٹریٹ ڈاکٹر چند رشیکھر سنگھ کی صدارت میں منعقد ضلع سطحی نگرانی کمیٹی کی میٹنگ میں اس بابت تیاریوں کا جائزہ لیا گیا اور ضلع سطحی ٹاسک فورس اور سیٹی اسکوائیڈ کی تشکیل کا فیصلہ کیا گیا ۔ اور ضلع سطحی ٹاسک فورس اور سیٹی اسکوائیڈ پلاسٹک تھیلی کے استعمال پر نظر رکھے گی ۔ پلاسٹک کے استعمال سے ماحولیات پر پڑنے والے منفی اثرات کے مد نظر ریاستی حکومت نے یہ قدم اٹھایا ہے ۔دربھنگہ ضلع میں پوری سختی سے اس پر عمل درآمد ہوگا ۔ موجودہ وقت میں صرف بایو میڈیکل کچرا کے جمع اور ذخیرہ میں استعمال ہونے والے کیری بیگ ، کمپنی سے پیک ہو کر آنے والی کھانے کی چیزیں اور نرسری میں استعمال ہونے والے پلاسٹک کو کیری بیگ نہیں مانا جائے گا اور ان تینوں کام میں پلاسٹک کے بیگ کو جھوٹ دی جائے گی ۔ اس کے علاوہ تمام طرح کے کیری بیگ پر مکمل پابندی ہوگی ۔ اگر اس کے علاوہ دوسرے کامو ںکیلئے پلاسٹک کیری بیگ بنانے ، تقسیم کرنے ، خرید و فروخت کیا جاتا ہے تو پہلی بار میں دو ہزار ، دوسری بار میں تین ہزار اوراس کے بعد ہر بار پکڑے جانے پرپانچ ہزار کا جرمانہ لگے گا ۔ پلاسٹک کیری بیگ کا دکانو ںمیں استعمال کرنے پر پہلی بار میں پندرہ سو ، دوسری بار میں پچیس سو اور تیسری بار اور اس کے بعد ہر بارپکڑے جانے پر پینتیس سو روپئے کا جرمانہ دینا ہوگا ۔ ضلع مجسٹریٹ نے ٹاؤن کمشنر کو ہدایت دیا کہ 14؍دسمبر کو اس قانون کے نافذ ہونے سے قبل ہی ہر طرح کے دکاندار اور سماجی سرگرمی میں حصہ لینے والے لوگوں کے ساتھ بیٹھک کرلیں اور انہیں اس قانون کی جانکاری دے دیں ۔انہو ںنے کہا کہ جن لوگوں کے پاس پلاسٹک کی کیری بیگ کا ذخیرہ ہے وہ اسے واپس کردیں اوراس کی جگہ جوٹ یا کپڑا کے کیری بیگ مانگ لیں ۔ جنرل منجیر ضلع صنعت اور انکم ٹیکس کے افسران کو ہدایت دی گئی کہ وہ پلاسٹک کے کیری بیگ کو بنانے اور خرید وفروخت کرنے والوں کی اطلاع ٹاؤن کمشنر کو دے دیں ۔ کپڑایاکاغذ یا بایو ڈگریول کے کیری بیگ بنانے والو ںکو ضلع انتظامیہ کے ذریعہ حوصلہ افزائی کی جائے گی ۔ اور بیداری پروگرام چلایا جائے گا ۔ ضلع مجسٹریٹ نے اطلاعات عامہ کے افسرکو ہدایت دی یا کہ پلاسٹک بیگ کے استعمال سے ہونے والے نقصان پر مبنی تشہیری پروگرا م چلائیں ۔ اسکول کالج اور دوسرے اداروں کے توسط سے بھی لوگوں کو اس بابت جانکاری دی جائے ۔ پلاسٹک تھیلی کی پابندی پر عمل در آمد کیلئے ضلع سطح پر مانیٹرنگ کمیٹی تشکیل کی جائے گی جس کی صدارت ضلع مجسٹریٹ کریں گے ۔ اس کے علاوہ اس کمیٹی میں مقامی اداروں کے میئر ، چیئرمین ، ٹاؤن کمشنر ، ایزکیٹو افسر ، پی ایچ ای ڈی کے ایزکیٹو انجینئر ، ریجنل افسر یا سائنس داں ،سماجی کارکن اور مشہور شخصیت شامل ہوں گی ۔ دکانو ںمیں پلاسٹک کیری بیگ کا استعمال نہ ہو اس کیلئے مسلسل چھاپہ ماری کی جائے گی ۔ چھاپہ ماری کیلئے سیٹی اسکوائیڈ اور ٹاسک فورس تشکیل دی جائے گی جس میں ضلع اور مقامی افسران اور سماجی تنظیم کے افراد شامل ہوں گے ۔ ضلع مجسٹریٹ نے آئندہ ۱۲ دسمبر کو تمام تنظیم اور ذمہ داران کے ساتھ کلکٹریٹ میں منعقد کرنے کا حکم دیا ۔ ساتھ ہی ایک بڑی ریلی بیداری چلانے کیلئے منعقد کی جائے گی ۔ بیٹھک میں میئر وجنتی کھیریا ، ضلع پریشد صد ر گیتا دیوی ، ناگیندر پرساد سنگھ ، بریندر پرساد ، ایس ڈی او راکیش گپتا ڈ،سول سرجن دلیپ مشرا وغیرہ موجود تھے ۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close