بہارسیمانچل

پھلکامیں بیل بیچ کرسسرنے دیا بیت الخلا کا تحفہ

کٹیہار:ٹوائلیٹ ایک پریم کتھا تو آپ نے سنیما ہال یا چھوٹے پردے پر دیکھا ہوگا کہ ہیرو اکشے کمار جب شادی کر بیوی سسرال آتی ہے تو اسے لوٹا پارٹی ممبر بننا پڑا تھا، بعد میں گھر میں ٹوائلٹ تعمیر کو لے کر سسرال چھوڑ کر میکے چلی جاتی ہے۔ لیکن ضلع کے پھلکا بلاک کے تحت سوہتھا جنوبی پنچایت کے پھلکا مسلم بستی کے ایک خاندان کے حقیقی زندگی میں پیش آیا ہے۔ سوکچھہ بھارت مشن کے مہم سے متاثر ہوکر اپنے گھر میں بیل کے جوڑے بیچ کر بہو کے لئے ٹوائلٹ کی تعمیر کرایا۔وہ آج اپنے گاؤں میں سوکچھہ بھارت مشن مہم کا آئکن بن گیا ہے۔ضلع کے پھلکا مسلم بستی کے کسان 70 سالہ محمد ابرات جب اپنے اکلوتے بیٹے محمد انصار کی شادی گاؤں میں ہی دھوم دھام سے کیا۔ جب بہوسسرال آئی تو ان کو بھی گاؤں کی دیگر کی طرح لوٹا پارٹی کے رکن بننا پڑا۔ جس میں نئی نویلی دلہن کو کافی رسوائی اٹھانی پڑی۔ آخر میں دلہن نے آخر کار بیت الخلاءکی مانگ کرتے ہوئے سسرال چھوڑ کر میکے چلی گئی۔چھ ماہ سے یہ اب بھی مائیکے میں ہے۔ اس کو لے کر گھر میں کافی تناؤ ہوا۔آخر سسرمحمد ابرات نے کھیتی کے دونوں بیل کو مویشی ہاٹ لے جاکر اسے 40 ہزار روپے میں فروخت کیا۔ اوربہو کے لئے فوری طور پر نئے بیت الخلاءکی تعمیر کروایا۔ آج بیت الخلاءبن کر تیار ہوچکا ہے۔ بہو اب سسرال آنے کے لئے تیار ہے۔اس سلسلے میں بی ڈی او ریکھا کماری نے بتایا کہ پھلکا بستی جیسے دیہی علاقوں کے لوگ بھی اپنی مرضی سے سوکچھہ بھارت مشن کا حصہ بن رہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ابرات نے ایک جوڑی بیل بیچ کر ٹوائلٹ بنایا ہے۔ جسے بلاک کے لئے ایک سبق ہے۔ بہت جلد انہیں سبسڈی رقم بھی مہیا کی جائے گی۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close