بہارپٹنہ

پی یو میں لہرایا جے ڈی یو کا پرچم، پی کےکی حکمت عملی آئی کام

پٹنہ:ہنگامے کے درمیان آخر کار پٹنہ یونیورسٹی طلبا یونین انتخابات میں پرشانت کشور یعنی پی کے کی حکمت عملی ہی کام آئی ہے۔ گزشتہ دیر رات پٹنہ یونیورسٹی طلبہ یونین کے آئے انتخابات کے نتائج میں جے ڈی یو نے صدر اور خزانچی کے عہدے پر قبضہ کر لیا۔ اے بی وی پی نے نائب صدر سمیت تین عہدوں پر کامیابی حاصل کی ہے۔
دیر رات آئے نتائج میں جے ڈی یو سے صدر کے عہدے کے امیدوارموہت پرکاش نے اے بی وی پی کے ابھینو کمار 1203 ووٹوں سے شکست دی۔ وہیں نائب صدر کے عہدے کے لئے اے بی وی پی کی انجنا سنگھ نے انتخاب جیتا ہے۔ اس کے علاوہ خاص بات یہ ہے کہ جنرل سکریٹری اور جوائنٹ سکریٹری کے عہدے پر اے بی وی پی نے جیت درج کی هہے۔دیر رات نتائج آنے کے بعد وہیں مخالف دھڑوں میں ناراضگی ہے۔ دیر رات ووٹوں کی گنتی میں تاخیر کے خلاف طلباء نے ہنگامہ کیا۔ سائنس کالج کے گیٹ پر طالب علموں کا جماوڑہ لگا رہا۔ جس کے بعد بھاری تعداد میں پولیس کے جوانوں نے گشت اور ووٹوں کی گنتی سائٹ کی سیکورٹی بڑھا دی ۔
دیر رات سینٹر پینل کے پانچوں سیٹوں پر نتائج جاری ہوئے۔ جس میں جے ڈی یو کے موہت پرکاش صدر اور ستیم کمار خزانچی کے عہدے پر منتخب اعلان کئے گئے۔ وہیں اے بی وی پی سے انجنا سنگھ نائب صدر، منی کانت منی جنرل سکریٹری اورروی راج جوائنٹ سکریٹری منتخب ہوئے۔
اپوزیشن نے منصفانہ طریقے سے الیکشن نہیں ہونے کا لگایا الزام
انتخابات کے نتائج آنے کے بعد الزامات کا کھیل شروع ہوا۔ جن ادھیکار طلبا کونسل اور سی وائی ایس ایس نے الزام لگاتے ہوئے کہا کہ دولت کے دم پر امیدواروں کی جیت ہوئی ہے۔پردیش کے حکمراں جنتا دل یو پارٹی کے لیڈرپرشانت کشور کی طرف سے انتخابات کو کیا متاثر کیاگیا ہے۔ منصفانہ طریقے سے انتخابات نہیں ہوئے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close