ہندوستان

چمبا میں زبردست بس حادثہ، 14ہلاک 17زخمی

شدہرہ دون’ 19جولائی (یو این آئی)اتراکھنڈ کے ٹہری میں جمعرات کی صبح اتراکھنڈ روڈ ٹرانسپورٹ کارپوریشن کی ایک بس گہری کھائی میں گرنے سے چودہ افراد ہلاک اور سترہ دیگر زخمی ہوگئے ۔ چھ زخمیوں کو نازک حالت میں ہیلی کاپٹر سے رشی کیش ایمس منتقل کردیا گیا ہے ۔سرکاری ذرائع کے مطابق یہ حادثہ ٹہری بلاک کے چمبا دھراسو روڈ پر کرگنی گاوں کے نزدیک ہوا۔ ٹہری کے ضلع ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی افسر برجیش بھٹ کے مطابق ریاستی ٹرانسپورٹ کارپوریشن کی ایک بس اترکاشی سے رشی کیش جارہی تھی ۔ بس جیسے ہی چمبا دھراسو روڈ پر کرگنی کے نزدیک پہونچی تو ڈرائیور نے کنٹرول کھو دیا جس کی وجہ سے بس بے قابو ہوکر ڈھائی سو میٹر گہری کھائی میں جاگری۔ضلع ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی نے بتایا کہ بس میں اکتیس افراد سوار تھے ۔ بس کے کھائی میں گرتے ہی تیرہ لوگوں کی موقع پر ہی دردناک موت ہوگئیاور اٹھارہ دیگر زخمی ہوگئے ۔ ان میں سات کی حالت نازک ہے ۔ جن میں سے چار لوگوں کو ہیلی کاپٹر سے ایمس رشی کیش لے جایا گیا ہے اور دیگر تین کو لانے کی تیاری کی جارہی ہے ۔مسٹر بھٹ کے مطابق موقع پر راحت اور بچاو کام مکمل کرلیا گیا ہے ۔ ایک لاش کی تلاش کی جارہی ہے ۔ لاشوں کا پنچنامہ کردیا گیا ہے اور اس کے بعد پوسٹ مارٹم کی کارروائی کی جائے گی۔ ذرائع کے مطابق حادثہ کی اطلاع ملتے ہی سب سے پہلے آس پاس کے گاوں والے جائے حادثہ پر پہنچے اور راحت او ربچاو کا کام شروع کردیا۔ پولیس اور انتظآمیہ کے ساتھ ڈیزاسٹر مینجمنٹ کی ٹیم بھی موقع پر پہنچ گئی ۔ ضلع مجسٹریٹ سونیکا اور ایس ایس پی وملا گنجل نے موقع پر جاکر راحت اور بچاو کی ذمہ داری سنبھالی۔وزیر اعلی ترویندر سنگھ راوت نے زخمیوں کےلئے ہیلی کاپٹر کا فوراً انتظام کرنے کا حکم دیا اور ضلع مجسٹریٹ کو حادثہ میں زخمیوں کو ہر ممکن مدد کی ہدا یت دی۔وزیر اعلی نے اس حادثے پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے اور زخمیوں کو ہر ممکن مدد کی یقین دہانی کرائی ہے ۔ حکومت نے ہلاک ہونے والوں کے رشتہ داروں کو دود و لاکھ روپے اور زخمیوں کو پچاس پچاس ہزار روپے معاوضہ دینے کا بھی اعلان کیا۔گورنر کرشن کانت پال نے بھی اس حادثے پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے ۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close