سیاستہندوستان

’ چوکیدار‘کو صرف اپنے سوٹ بوٹ کے دوستوں کی فکر ہے

راہل گاندھی نے وزیردفاع سیتارمن سے مانگا استعفیٰ

نئی دہلی: کانگریس کے صدر راہل گاندھی نے وزیردفاع نرملا سیتارمن کو ہندوستان ایرونوٹکس لمیٹڈ(ایچ اے ایل)کو ایک لاکھ کروڑ روپے کے کانٹریکٹ دینے سے متعلق دستاویز پارلیمنٹ میں پیش کرنے کا چیلنج کرتے ہوئے اتوار کو کہا کہ اس میں ناکام رہنے پر انہیں اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دینا چاہئے۔
راہل گاندھی نے ٹویٹ کیا،’’جب آپ جھوٹ بولتے ہیں تو اسے چھپانے کیلئے آپ کو اور زیادہ جھوٹ بولنے پڑتے ہیں۔وزیر دفاع نے وزیراعظم کے رافیل جھوٹ کو صحیح ٹھہراتے ہوئے پارلیمنٹ میں جھوٹ بولا ہے۔کل وزیردفاع کو ایچ اے ایل کو ایک لاکھ کروڑ روپے کے کانٹرکٹ دینے سے متعلق دستاویز پارلیمنٹ میں رکھنے چاہئے ورنہ عہدے سے استعفیٰ دے دینا چاہئے۔‘‘
اس سے پہلے کانگریس صدر نے ایچ اے ایل کو رافیل سودے میں شامل نہ کرنے کیلئے وزیراعظم نریندر مودی پر پھر طنز کرتے ہوئے الزام لگایا کہ انہیں ملک کے بھلے برے کی کوئی فکر نہیں ہے۔مسٹر گاندھی نے سوشل نیٹ ورنکنگ سائٹ فیس بک پر وزیراعظم کا نام لئے بغیر لکھا،’’ایچ اے ایل کے پاس تنخواہ تک دینے کے پیسے نہیں ہیں،اس سے کسی کو بھی حیرت نہیں ہونی چاہئے۔رافیل تو دے ہی دیا تھا،اب کام پورا کرنے کیلئے سوٹ بوٹ والے دوست کو لوگوں کی ضرورت ہے جو اے ایچ ایل کے پاس ہیں،بغیر اے ایچ ایل کو کمزور کئے یہ والا کام تو ہو نہیں سکتا ؟‘‘۔کانگریس کے صدر نے الزام لگایا ،’’چوکیدار بس اپنی دوستی نبھا رہا ہے،ملک کے بھلے برے سے اسے کیا مطلب، دوستی برقرار رہے بس!‘‘۔اسی دوران کانگریس کے میڈیا انچارج رندیپ سنگھ سرجے والا نے ٹویٹ کرکے کہا ہے کہ وزیردفاع نرملا سیتارمن کا جھوٹ سامنے آگیا ہے۔انہوں نے دعوی کیا ہے کہ ایچ اے ایل کو ایک لاکھ کروڑ روپے کے ٹھیکے دئے گئے ہیں۔مسٹر سرجے والا نے ٹویٹ کیا،’’ایچ اے ایل کا کہنا ہے کہ ایک بھی پیسہ نہیں آیا ہے۔ایک بھی پیسے کے کانٹرکٹ پر دستخط نہیں کئے گئے ہیں۔‘‘کانگریس لیڈر نے کہا کہ ایچ اے ایل کو پہلی بار تنخواہ دینے کیلئے ایک ہزار کروڑ روپے کا قرض لینا پڑا ہے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close