پنجابہندوستان

چھترپتی قتل معاملہ: رام رحیم سمیت تین افراد قصوروار قرار، 17 جنوری کوسی بی آئی کی خصوصی عدالت سنائے گی سزا

پنچکولا:صحافی چھترپتی قتل معاملے کو لے کر خصوصی سی بی آئی عدالت میں جمعہ کو دوپہر بعد سماعت شروع ہوئی۔ پنچکولا کی خصوصی سی بی آئی کی عدالت میں سماعت کرتے ہوئے جج جگدیپ سنگھ نے ڈیرہ سچا سودا کے سربراہ گرمیت رام رحیم کو مجرم قرار دیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی تینوں دیگر ملزمان کشن لال، کلدیپ اور نرمل کو بھی مجرم قرار دیا ہے۔ تمام قصورواروں کو 17 جنوری کو سزا سنائی جائے گی۔فیصلہ سنائے جانے کے وقت کشن لال، کلدیپ اور نرمل جہاں عدالت میں موجود تھے۔ وہیں جنسی تشدد کے الزام میں روہتک کے سناریا جیل میں بیس سال کی سزا کاٹ رہا رام رحیم ویڈیوکانفرنسنگ کے ذریعے پیش ہوا۔ڈیرہ سچا سودہ سربراہ گرمیت رام رحیم پر کشن لال ، نرمل اور کلدیپ کے ساتھ مل کر سازش رچ کر سرسا کے جرنلسٹ رام چندر چھترپتی کا قتل کرنے کا الزام ثابت ہوگیا ہے۔ بائیک پر آئے کلدیپ نے گولی مار کر چھترپتی کا قتل کردیا تھا اور اس کے ساتھ نرمل بھی تھا۔ چھترپتی نے اپنے ایویننگ نیوز پیپر پورا سچ میں اس سلسلہ میں سادھوی کا خط شائع کیا تھا۔ اسی سے پورے معاملہ کا انکشاف ہوا تھا۔اس معاملہ میں 2003 میں ایف آئی آر درج ہوئی تھی اور 2006 میں معاملہ سی بی آئی کے سپرد کیا گیا تھا۔ سادھویوں کی آبروریزی کے معاملہ میں گرمیت رام رحیم سناریا جیل میں 20 سال قید کی سزا کاٹ رہا ہے۔ گرمیت رام رحیم ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ عدالت میں پیش ہوا۔
سی بی آئی عدالت میں فیصلہ سنائے جانے سے پہلے تینوں ملزمان کشن لال، کلدیپ اور نرمل کا ڈاکٹروں کی ٹیم نے سب سے پہلے میڈیکل چیک اپ کیا تھا۔ اس کے بعد عدالت نے فیصلہ سنایا۔ڈیرہ گرمیت سنگھ رام رحیم کو سرسا کے صحافی رام چندر چھترپتی کے قتل کے معاملے میں سی بی آئی کی خصوصی عدالت کی طرف سے مجرم ٹھہرایا گیا ہے۔ یہ قتل معاملہ 16 سال پرانا ہے۔ 24 اکتوبر 2002 کو سرسا کے صحافی رام چندر چھترپتی پر حملہ کرکے انہیں گولیوں سے چھلنی کر دیا گیا تھا۔ 21 نومبر 2002 کو دہلی کے اپالواسپتال میں رام چندر چھترپتی زندگی کی جنگ ہار گئے۔ چھترپتی مسلسل اپنے اخبار میں ڈیرے میں ہونے والے برائیوں سے متعلق خبروں کو شائع کررہے تھے۔ چھترپتی کے قتل کے بعد ان کے بیٹے انشل نے ہار نہیں مانی اور سی بی آئی جانچ کی مانگ کے لئے پنجاب اور ہریانہ ہائی کورٹ میں عرضی دائر کی۔ ان کی درخواست پر عدالت نے اس قتل کی تحقیقات نومبر 2003 کو سی بی آئی کے حوالے کر دی تھی۔ 2007 میں سی بی آئی نے کورٹ میں چارج شیٹ داخل کرتے ہوئے ڈیرہ سچا سودا کے سربراہ گرمیت سنگھ رام رحیم کو قتل کی سازش رچنے کاملزام ٹھہرایاگیاتھا۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close