بہارمتھلانچل

کسانوں کے قرض کو معاف کرنے کا معاملہ

بتیا،: ہائی کورٹ آڈر کے باوجود گناکسانوں کے بقایا رقم نہیں ملنے پر مرکزی اور ریاستی حکومت جواب دیں۔ کرانتی دیوس کے موقع پر اکھل بھارتیہ کسان مہا سبھا کی قیادت میں سیکڑوں کسانوں نے بتیا کے کلکٹریٹ احاطہ میں کسانوں کی مختلف مطالبہ کو لے کر گرفتار یاں دیں۔ اور ایس ڈی او کے ذریعہ صدرجمہوریہ میمورنڈم سونپا۔ گرفتاری سے پہلے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے اکھل بھارتیہ کسان سبھا کے سنل کمار راؤ نے کہا مودی راج کمپنی راج بن چکی ہے۔ کمپنیوں کے لئے ہرسال لاکھوں کروڑوں روپے معاف کئے جارہے ہیں۔ لیکن کسان کھیتی میں نقصان کے چلتے خودکشی کررہے ہیں۔ انہوں نے آگے کہا کہ چینی ملیں اب تک کسانوں کے پیسے ادا نہیں کرسکی ہے۔ جب کہ اس کے متعلق ہائی کورٹ نے کسانوں کے پیسے کا ادا کرنے کا حکم دیا۔ ساتھ ہی انہوں نے کہا سبھی فصلوں کا ڈیڑہا قیمت پر سرکاری خرید کی گرینٹی ہونی چاہئے ۔ آج کے جیل بھرومہم میں پروگرام کی قیادت اکھیل بھارتیہ کسان مہا سبھا کے لیڈر اندر دیو کشواہا، سنجے یادو، ستیہ نارائن کشواہا، لال جی یادو، تاج الدین منصوری، نظر عالم، مختار عالم، مزمل حسین، منظور عالم، اسلام میاں وغیرہ نے حصہ لیا۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close