جمو ں وکشمیر

کشمیراورہندوستانی فوج سے متعلق بیان پرغلام نبی آزاد اورسیف الدین سوزکےخلاف مجرمانہ معاملہ درج

کانگریس کے سینئرلیڈراورراجیہ سبھا میں حزب اختلاف کے رہنما غلام نبی آزاد اور سیف الدین سوز کے خلاف مجرمانہ شکایت درج کرائی گئی ہے۔ پٹیالہ ہاوس کورٹ میں سینئر وکیل ششی بھوشن نےدونوں پرہندوستانی فوج کے خلاف قابل اعتراض تبصرہ کرنے کا معاملہ درج کرایا ہے۔

واضح رہے کہ کچھ دنوں قبل ہی غلام نبی آزاد نے فوج کے خلاف بیان دیا تھا کہ فوج کے آپریشن میں دہشت گردوں سے زیادہ عام شہری مارے جاتے ہیں۔ انہوں نے پلوامہ کی مثال بھی دی تھی۔

کانگریس لیڈرکے اس بیان پربی جے پی نے سخت اعتراض کیا تھا۔ ساتھ ہی مرکزی وزیرروی شنکر پرساد نے پریس کانفرنس کرکے کانگریس پارٹی کو کھری کھوٹی سنائی تھی۔ اس کےعلاوہ بھی بی جے پی کے ترجمان نے ڈبیٹ کے ذریعہ اس بیان کی سخت مخالفت کی تھی۔

دوسری جانب غلام نبی آزاد کے بعد جموں و کشمیرسے تعلق رکھنے والے لیڈرسیف الدین سوزنے کشمیرکو لے کرمتنازعہ بیان دیا ہے۔ سیف الدین سوز کے مطابق، کشمیرکی پہلی ترجیح آزادی ہے۔ ایسی صورت حال میں جب سرحدوں کو تبدیل نہیں کیا جاسکتا ہے، کم ازکم کشمیرکے دونوں حصوں میں لوگوں کو امن سے زندگی گزارنے دینا چاہئے۔ سیف الدین سوز نے یہ بھی دعوی کیا تھا کہ سابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپئی اورسابق وزیراعظم منموہن سنگھ بھی اس بات کو اچھی طرح سے سمجھتے تھے، لیکن وہ بھی اسے حل نہیں کرپائے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close