بین الاقوامی

کمیشن کھانے کے جرم میں ارجنٹینا کے سابق نائب صدر کو 5 سال 10 ماہ قید کی سزا

بیونس آئرس: ارجنٹینا کے سابق نائب صدر امادو بودو کو کرپشن اور کمیشن کھانے کے جرم میں 5 سال 10 ماہ قید کی سنادی گئی ہے۔ارجنٹینا کے سابق نائب صدر امادو بودو کو کرپشن کے الزامات ثابت ہونے پر 5 سال 10 ماہ قید کی سزا سنائی گئی ہے۔ ان پر رشوت لینے اور سرکاری معاملات میں بے ضابطگیوں کا الزام ہے۔امادو کو وفاقی فوجداری عدالت سے ’’چیکونی کیس‘‘ کے سلسلے میں سزا سنائی گئی ہے، ان پر الزام تھا کہ انہوں نے اپنی من پسند ’’چیکونی پرنٹنگ کمپنی‘‘ کو سرکاری ٹھیکہ دلوایا جس کے بدلے اس کمپنی سے کمیشن وصول کیا۔ چیکونی پرنٹنگ کمپنی ارجنٹینا کی واحد نجی کمپنی ہے جو سرکاری کرنسی نوٹ چھاپتی ہے۔ امادو پر 90 ہزار پیسوس (3 ہزار 214 امریکی ڈالرز) جرمانہ کیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ امادو پر زندگی بھر کےلیے کسی بھی قسم کا سرکاری عہدہ رکھنے پربھی پابندی عائد کردی گئی ہے۔ امادو بودو نے 2011 سے 2015 تک ارجنٹینا کی صدر کرسٹینا فرنینڈس کے ساتھ خدمات انجام دی تھیں۔امادو پر بدعنوانی کا مقدمہ 2012 سے چل رہاتھا، اس کیس میں چیکونی پرنٹر کے سابق مالک نکولس چیکونی کو بھی مجرم قراردیا گیا تھا۔ امادو بودو نے خود پر لگائے گئے تمام الزامات کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ سیاستدان جو طاقتور راستے پر چلتے ہیں، انہیں پہلے تو میڈیا بعد ازاں عدالتی نظام کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ارجنٹینا کی اینٹی کرپشن ایجنسی کی سربراہ لورا الونسو نے اس مقدمے کی سماعت کی اور کہا کہ ارجنٹینا کی تاریخ میں پہلی بار نائب صدر کو سزاہوئی ہے، ارجنٹینا کی عدالت اب بدعنوان لوگوں کو سزا دینے کے لیے خود مختار ہے جس کے امور میں مداخلت کی سربراہِ مملکت کو بھی اجازت نہیں۔واضح رہے کہ امادو بودو نے اپنی سزا کے خلاف اپیل دائر کرنے کا اعلان بھی کیا ہے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close