اتر پردیش

گئو کشی کے نام پر فساد،پولس انسپکٹر سمیت دوافراد کی موت

بلند شہر: اترپردیش کے ضلع بلند شہر کے سیانان کوتوالی علاقے میں پیر کو گئو کشی کی مخالفت کے دوران مبینہ گئو رکشوں کی بھیڑ اور پولیس کے درمیان ہوئی جھڑپ میں کوتوالی انسپکٹر سمیت دولوگوں کی موت ہوگئی جبکہ دیگر چار زخمی ہیں۔ معاملے کی ایس آئی ٹی جانچ کے ہدایات دیئے گئے ہیں۔پولیس ذرائع نے بتایا کہ مشتعل گئو رکشکوں نے چنگراوٹی چوکی پر جم کر توڑپھوڑ کر وہاں پر موجود اشیاء کو آگ کے حوالے کردیا۔ پولیس کی کئی جیپ اور آدھا درجن دو پہیہ گاڑیوں کو آگ کے حوالے کردیا۔ پتھراو سے سیانا کوتوالی کے انچارج انسپکٹر سبودھ کمار سنگھ کی سر میں پتھر لگنے سے موت ہوگئی۔ پولیس کی جوابی کاروائی میں چنگراٹی گاوں کے ایک گئورکشک سمت کمار کی گولی لگنے سے موت ہوگئی۔ جھڑپ کے دوران پولیس ریجنل افسر ستیہ پرکاش، داروغہ سریش چودھری، ہوم گارڈ راجیندر کے علاوہ ایک دیگر پتھر لگنے سے شدید طور سے زخمی ہوئے ہیں۔اس درمیان لکھنؤ پولیس ڈی آئی جی (نظم و نسق) آنند کمارنے بلند شہر کے واقعہ کی ایس آئی ٹی جانچ کا حکم دیا ہے، معاملے کی سنگینی کو مد نظر رکھتے ہوئے غازی آباد اور نوئیڈا سے اضافی پولیس کو روانہ کیا گیا ہے۔ضلع مجسٹریٹ انج کمار، ایس ایس پی کے بی سنگھ اور میرٹھ ہیڈکوارٹر سے اڈیشنل پولیس ڈی آئی جی پرشانت کمار، پولیس سپرنٹنڈنٹ رام کمار اور کمشنر انت مشرا موقع پر موجود ہیں۔ اے ڈی جی پرشانت کمار نے دعوی کیا کہ حالات پوری طرح سے قابو میں ہیں ابھی کسی بھی فریق کی جانب سے کوئی مقدمہ درج نہیں کرایاگیا ہے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close