اتر پردیشہندوستان

گزشتہ دنو صرافہ کے یہاں چوری کی واردات کو پولس مشتبہ مان رہی ہے

بھوگائوں ،مین پوری :گزشتہ دن ہوئے صرافہ ار کی دکان پر چوری کی واردات کو لے کر بیور پار منڈل کے عہدیداروں نے علاقائی پولس افسر پریانک جین سے ملاقات کی اور چوری کی واردات کے انکشاف کئے جانے کا جلد مطالبہ کیا ، وہیں پولس اس چوری کی واردات کو فرضی تسلیم کر رہی ہے ،صرافہ کے یہاں چوری کی واردات کو پولس مشتبہ مان رہی ہے ،پھر بھی پولیس نے پوچھ گچھ کے لئے چار مشتبہ افراد کو حراست میں لیا ہے ،
پیر کو بیو پار منڈل کے صدر گرند سنگھ یادو کی قیادت میں پیو پار منڈل کے ارکان نے علاقائی پولس افسرپریانک جین سے ملاقات کی. بیو پار منڈل کے صدر یادو نے چوری کا جلد سے جلد انکشاف کیے جانے کا مطالبہ کرتے ہوئے تاجروں میں چوری کو لے کر پنپ رہے غصہ کی بات بھی گوش گزار کی . علاقائی پولس افسر نے بیو پاریوں کو بتایا کہ وہ متاثرہ کے ساتھ ہمدردی رکھ تے ہیں ،مگر ایک بات جو شک پیدا کر رہی ہے وہ یہ ہے کہ تین کوئنٹل کی الماری کو صبح کے وقت میں دوکان کے تالے توڑ کر لیجانا ہے ، بس یہ بات شک پیدا کر رہی ہے ،پولیس نے چوری کے کیس کے ابتدائی افشا کے لئے کچھ مشتبہ افراد کو حراست میں لیا ہے، چوری معاملہ کا جلد ہی انکشاف کیا جائے گا.
اس موقع پر متاثرہ نیرو ورما، سریندر چوہان، سریندر سنکھوار، عبدالسلام، پارس ہجیلا، گلزار ماسٹر، شہر قاضی حافظ خالد، عاقب شیخ، تالے سنگھ یادو ، شیام سنگھ کٹھیریا، کروڑی لال بھارتی، منیر خاں وغیرہ لوگ موجود رہے.

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close